اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور کے زیر اہتمام دسویں بین الاقوامی سیرت النبی ﷺکانفرنس کا انِقعاد وہیل چیئر ایشیا کپ: سری لنکن ٹیم کی فتح حکومت کا نیب ترمیمی بل کیس کے فیصلے پر نظرثانی اور اپیل کرنے کا فیصلہ واٹس ایپ کا ایک نیا AI پر مبنی فیچر سامنے آگیا ۔ جناح اسپتال میں 34 سالہ شخص کی پہلی کامیاب روبوٹک سرجری پی ایس او اور پی آئی اے کے درمیان اہم مذاکراتی پیش رفت۔ تحریِک انصاف کی اہم شخصیات سیاست چھوڑ گئ- قومی بچت کا سرٹیفکیٹ CDNS کا ٹاسک مکمل ۔ سپریم کورٹ پریکٹس اینڈ پروسیجر ایکٹ کے خلاف دائر درخواستوں پر آج سماعت ہو گی ۔ نائیجیریا ایک بے قابو خناق کی وبا کا سامنا کر رہا ہے۔ انڈونیشیا میں پہلی ’بلٹ ٹرین‘ نے سروس شروع کر دی ہے۔ وزیر اعظم نے لیفٹیننٹ جنرل منیرافسر کوبطورچیئرمین نادرا تقرر کرنے منظوری دے دی  ترکی کے دارالحکومت انقرہ میں وزارت داخلہ کے قریب خودکش حملہ- سونے کی قیمت میں 36 ہزار روپے تک گر گئی۔ عارف علوی کا اہم بیان بانی پی ٹی آئی صرف بااختیار لوگوں سے بات چیت چاہتے ہیں بلوچستان واشک میں کوئٹہ جانے والی بس کھائی میں گرنے سے 28 افراد جاں بحق 22 زخمی حکومت نے بجٹ 2024-25 میں امیروں کے لیے ٹیکس معافی واپس لینے کی تجویز پر غور کرنا شروع کردیا طوفانی بارشوں کے بعد کان کے تباہ ہونے سے 12 بھارتی ہلاک ہو گئے نیوکلیئر پاور کے حوالے سے پاکستان کی 26 سالہ یادگاری تقریب۔ اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور میں آئندہ بجٹ پر انڈسٹری اور اکیڈمیا ڈائیلاگ پیشانی کو جھوٹی و خطاء کار کیوں کہا گیا؟ بہاولپور میں باپ کے ہاتھوں کمسن بچیاں قتل خانہ کعبہ کا سونے کا دروازہ ۔ رحمت کا پرنالا اور حجر اسود پر چاندی کا خول چڑھانے کے اعزاز بھی بہاولپور کے حصے میں آیا خانہ کعبہ کے دروازے اور حجر اسود کا خول تیار کرنے والی فیکٹری کے پاکستانی مالک خالق حقیقی سے جاملے

دادا جان "سید مسعود حسن شہاب دہلوی” کوہم سے جدا ہوئے33 برس بیت گئے! شہیر رضوی

دادا جان (سید مسعود حسن شہاب دہلوی) کو ہم سے جدا ہوئے 33 برس بیت گئے!

تحریر۔۔۔۔۔۔۔ شہیر رضوی

دادا جان، محترم سید شہاب دہلوی کا نام اور کام کسی تعارف یا حوالے کا محتاج نہیں. انھیں لکھنے والے شہاب دہلوی لکھتے اور کہتے ہیں، سمجھنے والے شہاب بہاول پوری. مگر چشم فلک شاہد ہے کہ وہ ان لاحقوں، سابقوں سے ماورا تھے. وہ اُردو ادب کی کہکشاں کا ایک روشن ستارہ تھے.

اُنھوں نے تمام عمر علمی ادبی سرگرمیوں کے لیے وقف کردی اور نتیجتاً انفرادی حیثیت میں ان کے کریڈٹ پر تحقیقی و تنقیدی کام کا انبوہ کثیر موجود ہے کہ اتنا کام تو حکومتی سرپرستی میں چلنے والے کسی ادارے نے نہیں کیا. کسی ستائش و صلہ کی پرواہ کیے بغیر اور ادبی مناقشات میں اُلجھے بغیر کام کرنا اُن کا خاصہ تھا.

دادا جان جتنے عمدہ نثرنگار تھے، اُس سے بھی زیادہ اعلیٰ پائے کےشاعر تھے، وہ جتنے بڑے صحافی تھے، اتنے ہی بلند مرتبہ محقق و مؤلف تھے. اُن کے متعلق میرے والد محترم ڈاکٹر شاہد رضوی کی بطور تاریخ کے طالب علم رائے ہے کہ حضرت شہاب دہلوی نے کوئی علمی، ادبی اور صحافتی خدمت نہ بھی سرانجام دی ہوتی، اُن کی شہرت کے لیے آپ کی تصنیف "خطہ پاک اُوچ”ہی کافی تھی. بلاشبہ اُن کی مذکورہ تصنیف سرسید احمد خان کی تصنیف آثار الصنادید سے کسی طور کم نہیں اور برصغیر میں جو رتبہ سائنٹیفک سوسائٹی کو حاصل ہے، خطہ بہاول پور میں اُردو زبان و ادب کی ترقی کے لئے بعینہ یہی رتبہ شہاب دہلوی کی اُردو اکیڈمی کو حاصل ہے. اگر سر سید کا "تہذیب الاخلاق” اُن کا صدقہ جاریہ ہے تو الہام اور سہ ماہی الزبیر شہاب دہلوی کا صدقہ جاریہ ہے. جو تخلیق کاران بہاول پور کے تشخص کی بہتری کی راہ پر گامزن ہے.

جناب شہاب دہلوی نے اپنے فکروعمل سے یہاں کے ماحول پر بہت گہرے اور دور رس اثرات مرتب کئے اور شعر و ادب کی ترقی کے ساتھ ساتھ انھوں نے علاقے کی تہذیب و ثقافت اور زبان و تاریخ کو محفوط کرنے کے لیے گرانقدر خدمات سرانجام دیں.آپ نے ساری زندگی خطہ بہاول پور کے دینی و روحانی تشخص کو اُجاگر کیا اور اُردو زبان و ادب کی ترویج و ارتقاء کی عملی کوششوں کے ساتھ ساتھ علمی سطح پر اس علاقے کی زبان و ادب کی تاریخ مرتب کی اور مختلف موضوعات پر درجنوں کتب لکھ کر ملکی سطح پر بہاول پور کو روشناس کرایا۔ دادا جان مرحوم کی تخلیقی اور تحقیقی شخصیت کئی جہتوں میں پھیلی ہوئی ہے انھوں نے ایسے ایسے موضوعات پر تحقیقی کام کیا جس کو پہلے کسی نے چھوا نہیں تھا یہی وجہ ہے کہ وہ بہاول پور کی علمی ادبی اور سیاسی تاریخ کے مستند مؤرخ قرار پائے ہیں.

بلا شبہ آپ سے بڑھ کر اس خطہ کے تشخص کی نشرواشاعت کسی اور نے نہیں کی اور اس خطہ میں جدید نقطہ نگاہ سے علم و ادب کی جو خدمت ہوئی اُس کے بانی جناب شہاب دہلوی ہیں.

قارئین سے استدعا ہے کہ حضرت شہاب دہلوی رحمۃ اللہ کی مغفرت اور بلند درجات کے لیے دُعا فرمائیں

50% LikesVS
50% Dislikes
WP Twitter Auto Publish Powered By : XYZScripts.com