اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور کے زیر اہتمام دسویں بین الاقوامی سیرت النبی ﷺکانفرنس کا انِقعاد وہیل چیئر ایشیا کپ: سری لنکن ٹیم کی فتح حکومت کا نیب ترمیمی بل کیس کے فیصلے پر نظرثانی اور اپیل کرنے کا فیصلہ واٹس ایپ کا ایک نیا AI پر مبنی فیچر سامنے آگیا ۔ جناح اسپتال میں 34 سالہ شخص کی پہلی کامیاب روبوٹک سرجری پی ایس او اور پی آئی اے کے درمیان اہم مذاکراتی پیش رفت۔ تحریِک انصاف کی اہم شخصیات سیاست چھوڑ گئ- قومی بچت کا سرٹیفکیٹ CDNS کا ٹاسک مکمل ۔ سپریم کورٹ پریکٹس اینڈ پروسیجر ایکٹ کے خلاف دائر درخواستوں پر آج سماعت ہو گی ۔ نائیجیریا ایک بے قابو خناق کی وبا کا سامنا کر رہا ہے۔ انڈونیشیا میں پہلی ’بلٹ ٹرین‘ نے سروس شروع کر دی ہے۔ وزیر اعظم نے لیفٹیننٹ جنرل منیرافسر کوبطورچیئرمین نادرا تقرر کرنے منظوری دے دی  ترکی کے دارالحکومت انقرہ میں وزارت داخلہ کے قریب خودکش حملہ- سونے کی قیمت میں 36 ہزار روپے تک گر گئی۔ عارف علوی کا اہم بیان بانی پی ٹی آئی صرف بااختیار لوگوں سے بات چیت چاہتے ہیں بلوچستان واشک میں کوئٹہ جانے والی بس کھائی میں گرنے سے 28 افراد جاں بحق 22 زخمی حکومت نے بجٹ 2024-25 میں امیروں کے لیے ٹیکس معافی واپس لینے کی تجویز پر غور کرنا شروع کردیا طوفانی بارشوں کے بعد کان کے تباہ ہونے سے 12 بھارتی ہلاک ہو گئے نیوکلیئر پاور کے حوالے سے پاکستان کی 26 سالہ یادگاری تقریب۔ اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور میں آئندہ بجٹ پر انڈسٹری اور اکیڈمیا ڈائیلاگ پیشانی کو جھوٹی و خطاء کار کیوں کہا گیا؟ بہاولپور میں باپ کے ہاتھوں کمسن بچیاں قتل خانہ کعبہ کا سونے کا دروازہ ۔ رحمت کا پرنالا اور حجر اسود پر چاندی کا خول چڑھانے کے اعزاز بھی بہاولپور کے حصے میں آیا خانہ کعبہ کے دروازے اور حجر اسود کا خول تیار کرنے والی فیکٹری کے پاکستانی مالک خالق حقیقی سے جاملے

آئی ایس پی آر نے10 اپریل کوبہاولنگر میں پیش آنے والے واقعے کی انکوائری کا مطالبہ کر دیا

آئی ایس پی آر نے10 اپریل کوبہاولنگر میں پیش آنے والے واقعے کی انکوائری کا مطالبہ کر دیا

آئی ایس پی آر نے10 اپریل کوبہاولنگر میں پیش آنے والے واقعے کی انکوائری کا مطالبہ کر دیا

یوتھ ویژن : آئی ایس پی آر نے 10 اپریل کو بہاولنگر میں پیش آنے والے واقعے کی انکوائری کا مطالبہ کر دیا

یوتھ ویژن نیوز کے مطابق آئی ایس پی آر نے جمعہ کو کہا کہ بہاولنگر میں پیش آنے والے "افسوسناک واقعے” کے لیے "حقائق کا پتہ لگانے اور ذمہ داری کی تقسیم” کے لیے سیکیورٹی اور پولیس حکام پر مشتمل مشترکہ انکوائری کی جائے گی۔

بدھ کے روز، پاکستانی فوج کے افسران کو بہاولنگر میں مبینہ طور پر پولیس اہلکاروں پر حملہ اور مار پیٹ کرتے دکھایا گیا ویڈیوز کا ایک سلسلہ سوشل میڈیا پر وائرل ہوا۔ ایک ویڈیو میں دکھایا گیا ہے کہ ایک شخص خون آلود ناک کے ساتھ زمین پر بیٹھا ہے۔ ایک اور کلپ میں دکھایا گیا ہے کہ ایک آدمی اور دو فوجی اہلکار پولیس والوں کو قطار میں گھٹنے ٹیکنے پر مجبور کر رہے ہیں۔

کچھ سوشل میڈیا صارفین نے دعویٰ کیا کہ یہ واقعہ پولیس کی جانب سے ایک فوجی کے رشتہ دار سے غیر قانونی ہتھیار برآمد کرنے سے ہوا ہے۔

youthvision.pk آزادانہ طور پر کلپس کی صداقت کی تصدیق نہیں کر سکا۔

اس فوٹیج نے سیاستدانوں کی طرف سے بھی غم و غصہ نکالا تھا۔

اس کے بعد، پنجاب پولیس نے "جعلی پروپیگنڈے” کی تردید کی تھی۔ "بہاولنگر میں اس معاملے کو، جو سوشل میڈیا پر وائرل ہوا، اسے سیاق و سباق سے ہٹ کر اور بڑھا چڑھا کر پیش کیا گیا ہے،” پولیس نے X پر ایک بیان میں کہا، جو پہلے ٹویٹر تھا۔

آج، انٹر سروسز پبلک ریلیشنز (آئی ایس پی آر) نے – مبینہ واقعے کی کوئی تفصیلات بتائے بغیر – کہا: "حال ہی میں بہاولنگر میں ایک افسوسناک واقعہ پیش آیا، جسے فوری طور پر فوج اور پولیس حکام کی مشترکہ کوششوں سے حل کیا گیا۔

آئی ایس پی آر نے کہا، "اس کے باوجود، مخصوص مقاصد کے حامل بعض دھڑوں نے سوشل میڈیا پر ریاستی اداروں اور سرکاری محکموں کے درمیان تفرقہ پیدا کرنے کے لیے پروپیگنڈے کو ہوا دینا شروع کر دیا”۔

"منصفانہ اور جان بوجھ کر انکوائری کو یقینی بنانے، اور قوانین کی خلاف ورزی اور اختیارات کے غلط استعمال کی ذمہ داری کا تعین کرنے کے لیے، حقائق کا پتہ لگانے اور ذمہ داری کی تقسیم کے لیے سیکورٹی اور پولیس اہلکاروں پر مشتمل ایک مشترکہ انکوائری کی جائے گی۔”

واقعہ پروٹوکول پر عمل نہ کرنے کی وجہ سے ہوا، آئی جی پنجاب

دریں اثناء پنجاب کے انسپکٹر جنرل (آئی جی) ڈاکٹر عثمان انور نے کہا کہ صوبائی پولیس فورس کا مورال ہے جس کی بنیاد پر دہشت گردوں اور ڈاکوؤں کے خلاف کارروائی کی گئی۔

ایکس پر جاری ایک ویڈیو پیغام میں آئی جی نے کہا کہ سوشل میڈیا پر بہاولنگر واقعے کے حوالے سے فوج اور پولیس کے درمیان تصادم کا تاثر دینے کی کوشش کی گئی۔

انہوں نے کہا کہ "فوری کارروائی کی گئی اور بہاولپور کے ریجنل پولیس آفیسر (آر پی او) اور مقامی آرمی کمانڈ نے علاقے کا دورہ کیا۔”

آئی جی نے جو کچھ کہا اس کی ایک تصویر شیئر کرتے ہوئے یہ ایک کالعدم تنظیم کا بیان تھا، آئی جی نے کہا کہ اس واقعے کو اداروں کے درمیان ٹکراؤ پیدا کرنے کے لیے استعمال کیا گیا اور لوگوں کے سامنے یہ پیش کرنے کی کوشش کی گئی کہ "ہم آپس میں لڑ رہے ہیں اور دشمن کے پیچھے نہیں جائیں گے۔ "

آئی جی نے کہا کہ کچھ ویڈیوز سیاق و سباق کے بغیر دکھائی گئیں جبکہ پرانی ویڈیوز بھی پوسٹ کی گئیں جس کے نتیجے میں پنجاب پولیس میں مایوسی پھیل گئی۔

واقعے کے حوالے سے بات کرتے ہوئے پنجاب پولیس کے سربراہ نے کہا کہ اسپیشل انیشیٹو پولیس اسٹیشنز بنائے گئے تھے۔ انہوں نے کہا کہ معیاری آپریٹنگ طریقہ کار اور پروٹوکول پر عمل نہیں کیا گیا جس کے نتیجے میں "رد عمل” پیدا ہوا۔

انہوں نے کہا کہ دونوں فریقین نے علاقے کا دورہ کیا، ایک ساتھ بیٹھ کر ’پاکستان زندہ باد‘، ’فوج زندہ باد‘ اور ’پنجاب پولیس زندہ باد‘ کے نعرے لگائے تاکہ یہ تاثر مٹایا جا سکے کہ اداروں کے درمیان تصادم ہے۔

آئی جی نے کہا کہ دونوں اداروں نے محکمانہ کارروائی شروع کر دی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس سلسلے میں مشترکہ انکوائری بھی قائم کی گئی ہے تاکہ انصاف کے تمام تقاضے پورے ہوں۔

انہوں نے قوم سے یہ بھی مطالبہ کیا کہ وہ "ٹرولنگ اور مارپیٹ” کا شکار نہ ہوں۔

50% LikesVS
50% Dislikes
WP Twitter Auto Publish Powered By : XYZScripts.com