Your theme is not active, some feature may not work. Buy a valid license from stylothemes.com
روزنامہ یوتھ ویژن کی جانب سے تمام اہل اسلام کو دل کی اتہا گہرائیوں سے عیدالفطر 2024 مبارک ہو اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور کے زیر اہتمام دسویں بین الاقوامی سیرت النبی ﷺکانفرنس کا انِقعاد وہیل چیئر ایشیا کپ: سری لنکن ٹیم کی فتح حکومت کا نیب ترمیمی بل کیس کے فیصلے پر نظرثانی اور اپیل کرنے کا فیصلہ واٹس ایپ کا ایک نیا AI پر مبنی فیچر سامنے آگیا ۔ جناح اسپتال میں 34 سالہ شخص کی پہلی کامیاب روبوٹک سرجری پی ایس او اور پی آئی اے کے درمیان اہم مذاکراتی پیش رفت۔ تحریِک انصاف کی اہم شخصیات سیاست چھوڑ گئ- قومی بچت کا سرٹیفکیٹ CDNS کا ٹاسک مکمل ۔ سپریم کورٹ پریکٹس اینڈ پروسیجر ایکٹ کے خلاف دائر درخواستوں پر آج سماعت ہو گی ۔ نائیجیریا ایک بے قابو خناق کی وبا کا سامنا کر رہا ہے۔ انڈونیشیا میں پہلی ’بلٹ ٹرین‘ نے سروس شروع کر دی ہے۔ وزیر اعظم نے لیفٹیننٹ جنرل منیرافسر کوبطورچیئرمین نادرا تقرر کرنے منظوری دے دی  ترکی کے دارالحکومت انقرہ میں وزارت داخلہ کے قریب خودکش حملہ- سونے کی قیمت میں 36 ہزار روپے تک گر گئی۔ بھارت کے ساتھ 5 بلین ڈالر کی تجارت معطل اسحاق ڈار نے وجہ بتا دی ملکی تاریخ میں پہلی دفعہ صوبے بھر کے سرکاری سکولوں کے لاکھوں بچوں نے اپنے 60,000 نمائندے منتخب کر لیے کرغزستان میں پاکستانی طلباء کو ہجومی تشدد کے واقعات ‘انتہائی تشویشناک’ گھروں کے اندر رہنے کا مشورہ دے دیا عمر ایوب نے بانی پی ٹی آئی کے 7 مقدمات کو مسترد کرتے ہوئے ‘چوری شدہ نشستوں’ کی واپسی پر بات چیت کی ہے ایلون مسک کا بڑا اعلان ٹویٹر X.com بن گیا قومی اسمبلی نے پی ٹی آئی کی زرتاج گل کے خلاف اعتراض پر ن لیگ کے طارق بشیر چیمہ کو موجودہ اجلاس کے لیے معطل کر دیا سپریم کورٹ نے عدلیہ کے خلاف ریمارکس پر فیصل واوڈا اور مصطفیٰ کمال کو شوکاز نوٹس جاری کر دیئے ٹائمز ہائر ایجوکیشن ینگ یونیورسٹی رینکنگ 2024 نے 33 پاکستانی اداروں کو تسلیم کیا ہے جن میں اسلامیہ یونیورسٹی آف بہاولپور بھی شامل ہے، تعلیم اور تحقیق میں ان کی شاندار کارکردگی پر اپنی فہرست جاری کردی نیب قوانین کی سماعت جس میں عمران خان کو شامل کیا گیا ہے، 2 مزیدکیسیزمیں سزا معطل پی ٹی آئی جو تبلیغ کرتی ہے اس پر عمل نہیں کرتی، بلاول بھٹو

پاکستان میں 2 کروڑ افراد کو انٹرنیٹ تک رسائی نہیں، احسن آقبال

2 کروڑ افراد کو انٹرنیٹ تک رسائی نہیں

یوتھ وٰیژن : پاکستان میں 2 کروڑ افراد کو انٹرنیٹ تک رسائی نہیں ہے آحسن کا بیان سامنے آگیا-

ملک کی نصف سے زیادہ آبادی کو انٹرنیٹ تک رسائی حاصل نہیں ہے، لیکن ڈیجیٹل تبدیلی پر بہتر کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے اضلاع انسانی ترقی کے لحاظ سے بھی بہتر کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے علاقوں میں شامل ہیں، پہلی مرتبہ ڈیجیٹل ڈویلپمنٹ انڈیکس (DDI) رپورٹ، منگل کو جاری کی گئی-

اقوام متحدہ کے ترقیاتی پروگرام

اقوام متحدہ کے ترقیاتی پروگرام (یو این ڈی پی) کے تعاون سے تیار کی گئی یہ رپورٹ نیشنل ہیومن ڈویلپمنٹ رپورٹ 2024 کا حصہ ہے جس کا آغاز وزیر منصوبہ بندی و ترقی احسن اقبال نے کیا۔

رپورٹ میں ملک کو ڈیجیٹل ترقی کے لحاظ سے ’اعتدال پسند‘ زمرے میں رکھا گیا اور بتایا گیا کہ خواتین ڈیجیٹل ترقی سے محروم ہیں اور جن میں سے 83.5 فیصد نے دعویٰ کیا ہے کہ ان کی شریک حیات یا والدین ان کے فون کی ملکیت کا حکم دیتے ہیں۔

اقوام متحدہ کے منصوبے (یو این ڈی پی) کے تعاون سے تیار کیا گیا یہ رپورٹ نیشنل ہیومن ڈویلپمنٹ رپورٹ 2024 کا حصہ ہے جس کا آغاز وزیر منصوبہ بندی اور ترقی اقبال نے کیا ہے۔

رپورٹ میں ملک کو ترقی کے لحاظ سے ‘اعتدال پسند’ زمرے میں رکھا گیا ہے اور بتایا گیا ہے کہ خواتین کی ترقی سے محبت ہے اور جن سے 83.5 فیصد نے دعویٰ کیا ہے کہ ان کے شریک حیات والدین کے فون کی ملکیت ہے۔ حکم

ڈیجیٹل ڈویلپمنٹ انڈیکس

پہلی بار ڈیجیٹل ڈویلپمنٹ انڈیکس سے پتہ چلتا ہے کہ 80 فیصد سے زیادہ خواتین کے فون ان کے والدین یا شریک حیات کے ذریعہ ’کنٹرول‘ ہوتے ہیں۔

اسلام آباد وہ ضلع ہے جس میں ‘بہت زیادہ’ ڈیجیٹل ترقی ہے، اس کے بعد کراچی، لاہور، راولپنڈی، پشاور، ہری پور اور ایبٹ آباد ‘اعلی’ کیٹیگری میں ہیں۔

اس نے ڈیجیٹل تبدیلی پر بہتر کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے اضلاع اور انسانی ترقی کے اعلیٰ نتائج حاصل کرنے والے اضلاع کے درمیان ایک مضبوط تعلق ظاہر کیا۔

ملک کا انسانی ترقی کے اشاریہ میں 193 ممالک میں سے 164 کا درجہ کم ہے، اور صنفی عدم مساوات کے اشاریہ میں 166 ممالک میں سے 135 کی پوزیشن ہے۔

رپورٹ میں بتایا گیا کہ ڈیجیٹل تقسیم ناقص ترقیاتی نتائج کو مزید بڑھا دیتی ہے۔

اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے، مسٹر اقبال نے دعویٰ کیا کہ حکومت معاش کے امکانات کو بہتر بنانے، مالیاتی شمولیت کو تیز کرنے، روزگار کو بہتر بنانے، اور موثر عوامی خدمات کی فراہمی کے لیے تکنیکی جدت کے فوائد کو بروئے کار لانے کے لیے پرعزم ہے۔

جدید دور میں ڈیجیٹل رسائی کو بنیادی ضرورت کے طور پر تسلیم کرتے ہوئے، بجلی، صحت کی دیکھ بھال اور تعلیم جیسی ضروری خدمات کی طرح، وزیر نے تمام خطوں میں ڈیجیٹل تقسیم کو ختم کرنے کی حکومت کی ذمہ داری پر زور دیا۔

یو این ڈی پی کے اسسٹنٹ ایڈمنسٹریٹر اور ریجنل ڈائریکٹر ریجنل فار ایشیا اینڈ دی پیسفک کنی وگناراجا نے کہا کہ ایشیا پیسیفک میں 60 فیصد سے زیادہ آبادی آن لائن تھی، جس میں خواتین اور پسماندہ گروپوں کی نمائندگی نمایاں طور پر کم تھی۔

انہوں نے کہا، "پاکستان 2022 سے 2030 کے درمیان عالمی متوسط ​​طبقے کی ترقی میں چھٹا سب سے بڑا شراکت دار ہے، جس نے 25 ملین کا حصہ ڈالا،” انہوں نے کہا۔

انہوں نے کہا کہ "اس بڑھتے ہوئے متوسط ​​طبقے کے لیے ٹارگٹڈ ڈیجیٹل تبدیلی کی کوششیں ملک کی پیداواری صلاحیت کو بہت بہتر بنا سکتی ہیں۔”

UNDP پاکستان کے ریذیڈنٹ نمائندے ڈاکٹر سیموئل رِزک نے کہا: "ہمارا مقصد مستقبل پر مبنی پاکستان میں اپنا حصہ ڈالنا ہے جہاں ڈیجیٹل تبدیلی اس کی شمولیت کی پہچان بن جائے، اور اس کی خوشحالی کا سنگ بنیاد ہو۔”

رپورٹ میں روشنی ڈالی گئی کہ ڈیجیٹل انفراسٹرکچر اور قابل استطاعت چیلنجز کی وجہ سے نصف سے زیادہ پاکستان انٹرنیٹ تک رسائی نہیں رکھتا اور ملک کے تقریباً نصف اضلاع کی ڈی ڈی آئی رینکنگ کم ہے۔ بغیر

ڈیجیٹل ٹیکنالوجی تک مساوی رسائی، رپورٹ میں کہا گیا کہ پاکستان کے انسانی ترقی کے نتائج کم اور کم رہیں گے۔

50% LikesVS
50% Dislikes
WP Twitter Auto Publish Powered By : XYZScripts.com