اسلامیہ یونیورسٹی بہاولپورمیں کیرئیر کونسلنگ اور کیریئرگروتھ کےحوالے سے ایک روزہ تربیتی سیشن کا انعقاد

بہاول پور( علی رضا غوری سے )کیرئیر کاؤنسلنگ اینڈ پلیسمنٹ سنٹر،اسلامیہ یونیورسٹی بہاولپور نے کیرئیر کونسلنگ اور کیریئر گروتھ کے حوالے سے ایک روزہ تربیتی سیشن کا انعقاد کیا۔جس میںاسلامیہ یونیورسٹی بہاولپور کے تمام کیمپسز سیاسسٹنٹ رجسٹرارز،اسسٹنٹ کنٹرولرزاوراسسٹنٹ ٹریژرز نے شرکت کی اور انہیں کو ہینڈ آن ٹریننگ دی گئی۔اس سیشن کے مہمان خصوصی وائس چانسلر اسلامیہ یونیورسٹی بہاولپور پروفیسر ڈاکٹر اطہر محبوب نے کہا کہ میں اسلامیہ یونیورسٹی بہاولپور کو آنے والے سالوں میں پاکستان کی نمبر 1 یونیورسٹی بنانا چاہتا ہوں اور یہ صرف انتظامیہ کے مثبت طرز عمل اور مثالی طرز عمل کو اپنانے سے ہی ممکن ہے۔وائس چانسلر انجینئر پروفیسر ڈاکٹر اطہر محبوب کے مطابق یونیورسٹی فیکلٹی،تدریسی اور انتظامی عملے کے لحاظ سے تیزی سے پھیل رہی تھی، جس کے لیے اسی رفتار سے مالی وسائل کو متحرک کرنے کی ضرورت تھی۔ انہوں نے کہا کہ موثر انتظام اور ٹیم ورک کی وجہ سے ہم نے 13,500 سے 53,000 طلباء تک ترقی کی ہے اور 2022کے سپرنگ سمیسٹر میں ہونے والے داخلوں کے بعدیہ تعداد 70,000 سے زیادہ ہو سکتی ہے۔ وائس چانسلر نے مزید کہا کہ کنفیوشس نے ایک افسر کے مثالی رویے کو متعارف کرایا، اس کے مطابق ہر تہذیب اپنا نظریہ اور پیراڈائم لاتی ہے، اسی طرح ہمیں بھی مثالی طرز عمل کے ذریعے امن اور خوشحالی کو فروغ دینے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے بتایا کہ یہ یونیورسٹی ثقافت کے تنوع کو پھیلانے کے لیے خطے میں ایک تبدیلی کا ایجنٹ ثابت ہوئی ہے۔ انہوں نے اسسٹنٹ رجسٹرارز،اسٹنٹ کنٹرولرز اور اسسٹنٹ ٹریژرز پر زور دیا کہ وہ مثبت طرز عمل کو اپنائیں، جو انہیں ان کی پیشہ ورانہ زندگی میں جیت کی صورتحال کی طرف لے جائیں گے۔قبل ازیں ڈائریکٹر کیرئرکونسلنگ اینڈ پلیسمنٹ شاہد افضل درانی نے شرکاء کو ہینڈ آن ٹریننگ دی۔ انہوں نے انتظامی، قیادت اور مواصلات کی مہارتوں سمیت مختلف شعبوں کا احاطہ کیا۔ ڈائریکٹر نے کہا کہ شرکاء 7 Cs پر مبنی موثر مواصلاتی مہارتوں کو استعمال کرکے اپنی کارکردگی کو بڑھا سکتے ہیں۔ ان کے بقول دنیا ایک گلوبل ولیج بن چکی ہے جو کہ تکنیکی ترقی اور جغرافیائی سیاسی تبدیلیوں کے ذریعے آپس میں جڑی ہوئی ہے،اس لیے ہمیں ترقی یافتہ دنیا کی رفتار کے ساتھ آگے بڑھنے کی ضرورت ہے۔ ڈاکٹر جام سجاد حسین،کنسلٹنٹ نے شرکاء سے بات کرتے ہوئے یہ بھی بتایا کہ نازک حالات میں میڈیا سمیت بیرونی اسٹیک ہولڈرز کے ساتھ بات چیت کرتے ہوئے جادوئی الفاظ استعمال کریں تاکہ اعلیٰ انتظامیہ یا یونیورسٹی کو شرمندگی نہ ہو۔ شرکاء نے وائس چانسلر اسلامیہ یونیورسٹی بہاولپور انجینئرپروفیسر ڈاکٹر اطہر محبوب کوگرومنگ کے مواقع اور اپنے کیریئر کی ترقی کے لیے صحت مند پلیٹ فارم مہیا کرنے پران کا شکریہ ادا کیا۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں

WP Twitter Auto Publish Powered By : XYZScripts.com