Your theme is not active, some feature may not work. Buy a valid license from stylothemes.com
روزنامہ یوتھ ویژن کی جانب سے تمام اہل اسلام کو دل کی اتہا گہرائیوں سے عیدالفطر 2024 مبارک ہو اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور کے زیر اہتمام دسویں بین الاقوامی سیرت النبی ﷺکانفرنس کا انِقعاد وہیل چیئر ایشیا کپ: سری لنکن ٹیم کی فتح حکومت کا نیب ترمیمی بل کیس کے فیصلے پر نظرثانی اور اپیل کرنے کا فیصلہ واٹس ایپ کا ایک نیا AI پر مبنی فیچر سامنے آگیا ۔ جناح اسپتال میں 34 سالہ شخص کی پہلی کامیاب روبوٹک سرجری پی ایس او اور پی آئی اے کے درمیان اہم مذاکراتی پیش رفت۔ تحریِک انصاف کی اہم شخصیات سیاست چھوڑ گئ- قومی بچت کا سرٹیفکیٹ CDNS کا ٹاسک مکمل ۔ سپریم کورٹ پریکٹس اینڈ پروسیجر ایکٹ کے خلاف دائر درخواستوں پر آج سماعت ہو گی ۔ نائیجیریا ایک بے قابو خناق کی وبا کا سامنا کر رہا ہے۔ انڈونیشیا میں پہلی ’بلٹ ٹرین‘ نے سروس شروع کر دی ہے۔ وزیر اعظم نے لیفٹیننٹ جنرل منیرافسر کوبطورچیئرمین نادرا تقرر کرنے منظوری دے دی  ترکی کے دارالحکومت انقرہ میں وزارت داخلہ کے قریب خودکش حملہ- سونے کی قیمت میں 36 ہزار روپے تک گر گئی۔ بھارت کے ساتھ 5 بلین ڈالر کی تجارت معطل اسحاق ڈار نے وجہ بتا دی ملکی تاریخ میں پہلی دفعہ صوبے بھر کے سرکاری سکولوں کے لاکھوں بچوں نے اپنے 60,000 نمائندے منتخب کر لیے کرغزستان میں پاکستانی طلباء کو ہجومی تشدد کے واقعات ‘انتہائی تشویشناک’ گھروں کے اندر رہنے کا مشورہ دے دیا عمر ایوب نے بانی پی ٹی آئی کے 7 مقدمات کو مسترد کرتے ہوئے ‘چوری شدہ نشستوں’ کی واپسی پر بات چیت کی ہے ایلون مسک کا بڑا اعلان ٹویٹر X.com بن گیا قومی اسمبلی نے پی ٹی آئی کی زرتاج گل کے خلاف اعتراض پر ن لیگ کے طارق بشیر چیمہ کو موجودہ اجلاس کے لیے معطل کر دیا سپریم کورٹ نے عدلیہ کے خلاف ریمارکس پر فیصل واوڈا اور مصطفیٰ کمال کو شوکاز نوٹس جاری کر دیئے ٹائمز ہائر ایجوکیشن ینگ یونیورسٹی رینکنگ 2024 نے 33 پاکستانی اداروں کو تسلیم کیا ہے جن میں اسلامیہ یونیورسٹی آف بہاولپور بھی شامل ہے، تعلیم اور تحقیق میں ان کی شاندار کارکردگی پر اپنی فہرست جاری کردی نیب قوانین کی سماعت جس میں عمران خان کو شامل کیا گیا ہے، 2 مزیدکیسیزمیں سزا معطل پی ٹی آئی جو تبلیغ کرتی ہے اس پر عمل نہیں کرتی، بلاول بھٹو

کنگنا رناوت کی گائے کا گوشت کھانے کے خلاف افواہوں کی تردید سال 2024 کا پہلا کیس دائر ہوگیا

کنگنا کی تردید

یوتھ ویژن : کنگنا رناوت کی گائے کا گوشت کھانے کے خلاف افواہوں کی تردید سال 2024 کا پہلا کیس دائر ہوگیا -کنگنا رناوت نے گائے کا گوشت کھانے کی ‘شرمناک، بے بنیاد افواہوں’ کی تردید کی۔ سوشل میڈیا پر گردش کرنے والی افواہوں کے درمیان، اداکار-سیاستدان کنگنا رناوت نے X (سابقہ ​​ٹویٹر) پر گائے کے گوشت کے استعمال کی تجویز پیش کرنے والے دعووں کو حل کرنے اور مسترد کرنے کے لیے کہا ہے۔ بالی ووڈ کی واضح شخصیت نے آن لائن گردش کرنے والے بے بنیاد الزامات کی سختی سے تردید کرتے ہوئے یوگک اور آیورویدک طرز زندگی پر اپنی پابندی پر زور دیا۔

ایک حالیہ ٹویٹ میں، کنگنارناوت نے زور دے کر کہا، "میں گائے کا گوشت یا کسی اور قسم کا سرخ گوشت نہیں کھاتا، یہ شرمناک ہے کہ میرے بارے میں مکمل طور پر بے بنیاد افواہیں پھیلائی جا رہی ہیں، میں کئی دہائیوں سے یوگک اور آیورویدک طرز زندگی کی وکالت اور فروغ کر رہا ہوں۔ اب اس طرح کے ہتھکنڈے میرے امیج کو خراب کرنے کے کام نہیں آئیں گے۔ میرے لوگ مجھے جانتے ہیں اور وہ جانتے ہیں کہ میں ایک قابل فخر ہندو ہوں اور کوئی بھی چیز انہیں کبھی گمراہ نہیں کر سکتی۔ رناوت کی طرف سے یہ وضاحت 2019 کے ایک پرانے ٹویٹ کے دوبارہ منظر عام پر آنے کے جواب میں سامنے آئی ہے، جسے کچھ افراد اس کی غذائی عادات کے بارے میں ایک بیانیہ پھیلاتے تھے۔ سوالیہ ٹویٹ، تیسرے شخص میں لکھا گیا، رناوت کی سبزی خور کی طرف منتقلی اور یوگک طرز زندگی سے اس کی وابستگی کو بیان کیا گیا۔

مزید پڑھیں: کنگنا پر بڑا مقدمہ درج

کنگنا رناوت کا مزید کہنا تھا کہ ، "گائے کا گوشت کھانے یا کوئی اور گوشت کھانے میں کوئی حرج نہیں ہے۔ یہ مذہب کے بارے میں نہیں ہے! یہ کوئی ڈھکی چھپی حقیقت نہیں ہے کہ کنگنا نے آٹھ سال پہلے سبزی خور ہو کر یوگی بننے کا انتخاب کیا تھا۔ وہ اب بھی صرف ایک پر یقین نہیں رکھتیں۔ مذہب، اس کے برعکس، اس کا بھائی گوشت کھاتا ہے۔” تاہم، کنگنا رناوت نے واضح طور پر پرانے ٹویٹ میں ظاہر کیے گئے جذبات کی تردید کرتے ہوئے اس بات پر زور دیا کہ ان کے ذاتی عقائد ہندو مت کے اصولوں کے مطابق ہیں۔ رناوت، جو حال ہی میں ہماچل پردیش کی منڈی لوک سبھا سیٹ سے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے امیدوار کے طور پر سیاسی میدان میں داخل ہوئی ہیں، نے غلط معلومات کو دور کرنے کے لیے اپنے پلیٹ فارم کا استعمال کیا۔ اس نے آئندہ لوک سبھا انتخابات 2024 کے لیے اپنی مہم کی کوششوں کے ایک حصے کے طور پر شہر میں ایک روڈ شو کا انعقاد کیا، جس میں حلقوں کی حمایت حاصل کی اور منڈی کے لوگوں کے مفادات کی نمائندگی کرنے کے لیے اپنے عزم کا اعادہ کیا۔ فلم انڈسٹری میں اپنے سفر کی عکاسی کرتے ہوئے، کنگنا رناوت نے ان چیلنجوں پر روشنی ڈالی جن کا سامنا اسے ایک بیرونی شخص کے طور پر کرنا پڑا، خاص طور پر اس کے علاقائی پس منظر اور زبان کی مہارت کی وجہ سے۔ مشکلات کا سامنا کرنے کے باوجود، اس نے منڈی میں اپنی جڑوں پر فخر کا اظہار کیا اور مشکلات میں کامیابی کے لیے اپنے غیر متزلزل عزم پر زور دیا۔ ٹوئٹ میں اپنی آخری سنیما آؤٹنگ کے ساتھ، اور سابق وزیر اعظم اندرا گاندھی کی زندگی پر مبنی اس کی آنے والی ہدایت کاری کے منصوبے ایمرجنسی کے ساتھ، کنگنارناوت نے تفریحی صنعت اور سیاسی میدان دونوں میں لہریں جاری رکھی ہیں۔ کنگنا رناوت کا اس بیانیہ نے ان کی مزید مضبوطی اور یقین کو مظاہرہ کیا ہے، جب وہ ان بے بنیاد الزامات کا سامنا کر رہے ہیں۔ ان کی زندگی کی راہیں اور ان کے عملی اصولوں نے انہیں اپنے اعتبار اور اپنی شناخت کی پیشگوئی کرنے میں مدد فراہم کی ہے، جو انہیں سوشل میڈیا پر پھیلائی جانے والی غلط افواہوں کے خلاف محافظت فراہم کرتی ہے۔ ان کی حرارتی اور واضح وضاحت نے ان کی سختی اور عزم کو دوبارہ تصدیق کیا ہے، جو ان کو ان کے مقاصد کی ترقی اور ان کی اہمیت کے مظاہرہ کرنے میں مدد فراہم کرتا ہے۔ ان کا بیانیہ ہمیں یہ بات یاد دلااتا ہے کہ زندگی میں کامیابی اور استقلال حاصل کرنے کے لیے آپ کو اپنے اصولوں اور قیمتوں پر مضبوط رہنا چاہئے، جو ان کا موجودہ بیانیہ نمائندگی کرتا ہے۔

50% LikesVS
50% Dislikes
WP Twitter Auto Publish Powered By : XYZScripts.com