اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور کے زیر اہتمام دسویں بین الاقوامی سیرت النبی ﷺکانفرنس کا انِقعاد وہیل چیئر ایشیا کپ: سری لنکن ٹیم کی فتح حکومت کا نیب ترمیمی بل کیس کے فیصلے پر نظرثانی اور اپیل کرنے کا فیصلہ واٹس ایپ کا ایک نیا AI پر مبنی فیچر سامنے آگیا ۔ جناح اسپتال میں 34 سالہ شخص کی پہلی کامیاب روبوٹک سرجری پی ایس او اور پی آئی اے کے درمیان اہم مذاکراتی پیش رفت۔ تحریِک انصاف کی اہم شخصیات سیاست چھوڑ گئ- قومی بچت کا سرٹیفکیٹ CDNS کا ٹاسک مکمل ۔ سپریم کورٹ پریکٹس اینڈ پروسیجر ایکٹ کے خلاف دائر درخواستوں پر آج سماعت ہو گی ۔ نائیجیریا ایک بے قابو خناق کی وبا کا سامنا کر رہا ہے۔ انڈونیشیا میں پہلی ’بلٹ ٹرین‘ نے سروس شروع کر دی ہے۔ وزیر اعظم نے لیفٹیننٹ جنرل منیرافسر کوبطورچیئرمین نادرا تقرر کرنے منظوری دے دی  ترکی کے دارالحکومت انقرہ میں وزارت داخلہ کے قریب خودکش حملہ- سونے کی قیمت میں 36 ہزار روپے تک گر گئی۔ روس نے پیٹرول کی برآمدات پر 6 ماہ کے لیے پابندی عائد کر دی دنیا کے لیے بد صورت ترین مگر اپنے وقت کے بہترین کردار ضیاء محی الدین کی پہلی برسی "کپاس کی کاشت میں انقلابی تبدیلی وزیراعظم نے انتخابی نتائج میں تاخیر کے الزامات مسترد کر دیے بلوچستان کے علاقے پشین، قلعہ سیف اللہ میں دو بم دھماکے20 افراد جاں بحق جماعت اسلامی نے انتخابات میں دھاندلی کی صورت میں سخت مزاحمت کا انتباہ دے دیا کیا پی ٹی آئی خیبرپختونخوا کا قلعہ برقرار رکھ سکے گی؟ کراچی میں الیکشن کے انتظامات مکمل پی ٹی آئی کا 5 فروری کو نئے انٹرا پارٹی انتخابات کرانے کا اعلان

نواز نے ووٹ دیا تو کے پی میں ترقی کا وعدہ کیا۔

یوتھ ویژن : مظہر اسحاق چشتی سے پاکستان مسلم لیگ نواز (پی ایم ایل این) کے سپریمو نواز شریف نے پیر کے روز خیبرپختونخوا (کے پی) میں کئی ترقیاتی منصوبوں کا وعدہ کیا تھا اگر ان کی پارٹی 8 فروری کو ووٹ ڈالتی ہے۔

مانسہرہ میں ایک عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے، تین بار کے سابق وزیر اعظم نے صوبے کے شہریوں کو پی ٹی آئی کو ووٹ دینے کا ذمہ دار ٹھہرایا۔ انہوں نے الزام لگایا کہ "ایک ایسے شخص کو سامنے لایا جس نے ملک کو خراب کیا۔”

سابق وزیراعظم عمران خان پر تنقید کرتے ہوئے نواز شریف نے کہا کہ کے پی کے لوگ کیا کہتے ہیں، کیا صوبے نے ترقی کی؟ کیا نیا پاکستان بنا؟

سراج الحق کا الیکٹرک لائسنس کی تجدید کیخلاف عدالت جانےکا اعلان

انہوں نے انکشاف کیا کہ 2013 کے عام انتخابات میں، انہوں نے جمعیت علمائے اسلام (جے یو آئی-ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کی پی ٹی آئی کی نشستوں کی تعداد کے احترام میں ان کے ساتھ مخلوط حکومت بنانے کی درخواست کو مسترد کر دیا تھا۔

مسلم لیگ (ن) کے سپریمو نے ہجوم سے پوچھا کہ ایک دہائی تک صوبے پر حکومت کرنے کے بعد پارٹی نے کے پی میں کیا تبدیلیاں لائیں؟

آپ کے پی کے لوگ اس دھوکے باز ٹوٹو کے جال میں پھنس گئے؟ آپ نے ان کی حکومت کو ووٹ دیا حالانکہ میں وزیراعظم تھا لیکن وزیراعلیٰ کوئی اور تھا۔ کیا [انہوں نے] کے پی میں کوئی تبدیلی لائی؟ نواز نے پوچھا۔

انہوں نے مزید کہا کہ PLM-N نے 2018 میں دوبارہ حکومت بنائی ہوتی اگر انہیں ان کی پانچ سالہ مدت پوری ہونے سے پہلے بے دخل نہ کیا جاتا۔ نواز نے کہا کہ مانسہرہ کو کے پی کا بہترین شہر بننا چاہیے تھا۔

اگر پانچ جج مجھے اقتدار سے نہ ہٹاتے تو اس شہر میں ایک ہوائی اڈہ ہوتا۔ پچھلی حکومت نے سکھر سے آگے موٹروے بھی نہیں بنائی۔ باعزت ٹرانسپورٹ عوام کا حق ہے۔ ہم یہاں کالج، میڈیکل کالج اور یونیورسٹی بنائیں گے۔ مانسہرہ کے پانی کا مسئلہ شوگراں سے روٹ کر کے حل کیا جائے گا۔

انہوں نے مزید کہا کہ "K-P کے لوگوں کو صوبے میں روزگار کے ساتھ سستے نرخوں پر گیس، سبزیاں، پیٹرول فراہم کیا جائے گا۔”

مسلم لیگ ن کے سپریمو نے اقتدار میں آنے پر ایئرپورٹ، کراچی سے مانسہرہ تک ٹرین، شہر کو بالاکوٹ، کاغان، ناران، چلاس اور بابوسر سے ملانے والی موٹروے جیسے منصوبوں کا اعلان کیا۔

50% LikesVS
50% Dislikes
WP Twitter Auto Publish Powered By : XYZScripts.com