اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور کے زیر اہتمام دسویں بین الاقوامی سیرت النبی ﷺکانفرنس کا انِقعاد وہیل چیئر ایشیا کپ: سری لنکن ٹیم کی فتح حکومت کا نیب ترمیمی بل کیس کے فیصلے پر نظرثانی اور اپیل کرنے کا فیصلہ واٹس ایپ کا ایک نیا AI پر مبنی فیچر سامنے آگیا ۔ جناح اسپتال میں 34 سالہ شخص کی پہلی کامیاب روبوٹک سرجری پی ایس او اور پی آئی اے کے درمیان اہم مذاکراتی پیش رفت۔ تحریِک انصاف کی اہم شخصیات سیاست چھوڑ گئ- قومی بچت کا سرٹیفکیٹ CDNS کا ٹاسک مکمل ۔ سپریم کورٹ پریکٹس اینڈ پروسیجر ایکٹ کے خلاف دائر درخواستوں پر آج سماعت ہو گی ۔ نائیجیریا ایک بے قابو خناق کی وبا کا سامنا کر رہا ہے۔ انڈونیشیا میں پہلی ’بلٹ ٹرین‘ نے سروس شروع کر دی ہے۔ وزیر اعظم نے لیفٹیننٹ جنرل منیرافسر کوبطورچیئرمین نادرا تقرر کرنے منظوری دے دی  ترکی کے دارالحکومت انقرہ میں وزارت داخلہ کے قریب خودکش حملہ- سونے کی قیمت میں 36 ہزار روپے تک گر گئی۔ دنیا کے لیے بد صورت ترین مگر اپنے وقت کے بہترین کردار ضیاء محی الدین کی پہلی برسی "کپاس کی کاشت میں انقلابی تبدیلی وزیراعظم نے انتخابی نتائج میں تاخیر کے الزامات مسترد کر دیے بلوچستان کے علاقے پشین، قلعہ سیف اللہ میں دو بم دھماکے20 افراد جاں بحق جماعت اسلامی نے انتخابات میں دھاندلی کی صورت میں سخت مزاحمت کا انتباہ دے دیا کیا پی ٹی آئی خیبرپختونخوا کا قلعہ برقرار رکھ سکے گی؟ کراچی میں الیکشن کے انتظامات مکمل پی ٹی آئی کا 5 فروری کو نئے انٹرا پارٹی انتخابات کرانے کا اعلان الیکشن کمیشن نے 8 فروری کو عام تعطیل کا اعلان کر دیا

روس اوریوکرین میں جنگ بندی کیلئے چین میدان میں آگیا

چین نے جنگ کی طوالت پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ یوکرین اور روس جنگ بندی کے لیے مذاکرات کریں۔

چین کے سینئر سفارت کار کن گینگ نے اپنے یوکرائنی ہم منصب سے فون پر گفتگو کی اور جنگ بندی کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ فریقین کو امن کے لیے مذاکرات کرنا چاہیے۔

چین کی وزارت خارجہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ چینی سفارت کار نے یوکرین کے وزیر خارجہ دیمیٹرو کولیبا کو بتایا کہ چین امید کرتا ہے کہ تمام فریق پرسکون رہتے ہوئے دانش اور تحمل کا مظاہرہ کریں گے اور جلد امن مذاکرات دوبارہ شروع کریں گے۔

یاد رہے کہ چین نے یوکرین پر روس کے حملے کی مذمت سے گریز کیا ہے اور کبھی کھل کر روس پر تنقید نہیں کی تاہم اب فریقین پر زور دیا ہے کہ وہ یوکرین بحران کے سیاسی حل کے بارے میں چینی 12 نکاتی مقالے میں سے ایک یعنی جامع جنگ بندی پر متفق ہوں۔

چین کے اس 12 نکاتی حکمت عملی کا روس اور یوکرین نے گرمجوشی سے خیر مقدم کیا تھا جس میں شہریوں کے تحفظ اور ایک دوسرے کی خودمختاری کے احترام پر زور دیا گیا تھا۔

توقع ہے کہ چین کے صدر شی جنپنگ اگلے ہفتے ماسکو کے دورے پر اپنے روسی ہم منصب سے ملاقات کریں گے اور یوکرین کے صدر وولودیمیر زیلنسکی کے ساتھ ورچوئل میٹنگ کریں گے۔

50% LikesVS
50% Dislikes
WP Twitter Auto Publish Powered By : XYZScripts.com