امریکی حکام کو ملک سے بلیک لسٹ کرنےکامعاملہ، امریکہ کی ایران کو سنگین نتائج کی دھمکی

ایران کی جانب سے جنرل قاسم سلیمانی کے قتل میں ممکنہ طور پر ملوث ہونے پر امریکا کے 51 سینئر حکام اور عہدیداروں کو بلیک لسٹ کیے جانے پر امریکہ نے تہران کو سنگین نتائج سے خبردار کردیا۔

امریکی خبر رساں ادارے ایسوسی ایٹڈ پریس (اے پی) کی رپورٹ کے مطابق امریکی قومی سلامتی کے مشیر نے تہران کو امریکیوں کو نشانہ بنانے سے باز رہنے کو کہا ہے۔

رپورٹ میں وائٹ ہاؤس کے قومی سلامتی کے مشیر جیک سلیوان نے ایک جاری بیان میں ایران کو سنگین نتائج دھمکی دیتے ہوئے کہا کہ کوئی غلطی نہ کریں، امریکہ اپنے شہریوں کا تحفظ اور دفاع کرے گا۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز ایران نے 51 امریکی حکام اور عہدیداروں کو بلیک لسٹ میں شامل کرنے کا اعلان کیا تھا جس میں سابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ بھی شامل ہیں۔

ایران کی جانب سے ان امریکی عہدیداروں کو ایرانی کمانڈر قاسم سلیمانی کی موت میں ان کے کردار کی وجہ سے فہرست میں شامل کیا گیا۔

خیال رہے کہ ایک سال قبل بھی ایران نے ڈونلڈ ٹرمپ اور کئی سینئر امریکی حکام پر پابندیاں عائد کی تھیں اور چند روز قبل ہی جنرل قاسم سلیمانی کی دوسری برسی کے موقع پر ایران کے صدر ابراہیم رئیسی نے کہا تھا کہ اگر سابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ پر قاسم سلیمانی کے قتل کا مقدمہ نہیں چلایا جاتا، تو امریکہ سے بدلہ لیا جائے گا۔

یاد رہے کہ 3 جنوری 2020 کو اس وقت کے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی سربراہی میں امریکی فوج نے عراق کے دارالحکومت بغداد کے ایئرپورٹ پر فضائی کارروائی کرکے جنرل قاسم سلیمانی کو قتل کردیا تھا اور اس واقعے میں ان کے نائب بھی جاں بحق ہوئے تھے۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں

WP Twitter Auto Publish Powered By : XYZScripts.com