Your theme is not active, some feature may not work. Buy a valid license from stylothemes.com
روزنامہ یوتھ ویژن کی جانب سے تمام اہل اسلام کو دل کی اتہا گہرائیوں سے عیدالفطر 2024 مبارک ہو اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور کے زیر اہتمام دسویں بین الاقوامی سیرت النبی ﷺکانفرنس کا انِقعاد وہیل چیئر ایشیا کپ: سری لنکن ٹیم کی فتح حکومت کا نیب ترمیمی بل کیس کے فیصلے پر نظرثانی اور اپیل کرنے کا فیصلہ واٹس ایپ کا ایک نیا AI پر مبنی فیچر سامنے آگیا ۔ جناح اسپتال میں 34 سالہ شخص کی پہلی کامیاب روبوٹک سرجری پی ایس او اور پی آئی اے کے درمیان اہم مذاکراتی پیش رفت۔ تحریِک انصاف کی اہم شخصیات سیاست چھوڑ گئ- قومی بچت کا سرٹیفکیٹ CDNS کا ٹاسک مکمل ۔ سپریم کورٹ پریکٹس اینڈ پروسیجر ایکٹ کے خلاف دائر درخواستوں پر آج سماعت ہو گی ۔ نائیجیریا ایک بے قابو خناق کی وبا کا سامنا کر رہا ہے۔ انڈونیشیا میں پہلی ’بلٹ ٹرین‘ نے سروس شروع کر دی ہے۔ وزیر اعظم نے لیفٹیننٹ جنرل منیرافسر کوبطورچیئرمین نادرا تقرر کرنے منظوری دے دی  ترکی کے دارالحکومت انقرہ میں وزارت داخلہ کے قریب خودکش حملہ- سونے کی قیمت میں 36 ہزار روپے تک گر گئی۔ بھارت کے ساتھ 5 بلین ڈالر کی تجارت معطل اسحاق ڈار نے وجہ بتا دی ملکی تاریخ میں پہلی دفعہ صوبے بھر کے سرکاری سکولوں کے لاکھوں بچوں نے اپنے 60,000 نمائندے منتخب کر لیے کرغزستان میں پاکستانی طلباء کو ہجومی تشدد کے واقعات ‘انتہائی تشویشناک’ گھروں کے اندر رہنے کا مشورہ دے دیا عمر ایوب نے بانی پی ٹی آئی کے 7 مقدمات کو مسترد کرتے ہوئے ‘چوری شدہ نشستوں’ کی واپسی پر بات چیت کی ہے ایلون مسک کا بڑا اعلان ٹویٹر X.com بن گیا قومی اسمبلی نے پی ٹی آئی کی زرتاج گل کے خلاف اعتراض پر ن لیگ کے طارق بشیر چیمہ کو موجودہ اجلاس کے لیے معطل کر دیا سپریم کورٹ نے عدلیہ کے خلاف ریمارکس پر فیصل واوڈا اور مصطفیٰ کمال کو شوکاز نوٹس جاری کر دیئے ٹائمز ہائر ایجوکیشن ینگ یونیورسٹی رینکنگ 2024 نے 33 پاکستانی اداروں کو تسلیم کیا ہے جن میں اسلامیہ یونیورسٹی آف بہاولپور بھی شامل ہے، تعلیم اور تحقیق میں ان کی شاندار کارکردگی پر اپنی فہرست جاری کردی نیب قوانین کی سماعت جس میں عمران خان کو شامل کیا گیا ہے، 2 مزیدکیسیزمیں سزا معطل پی ٹی آئی جو تبلیغ کرتی ہے اس پر عمل نہیں کرتی، بلاول بھٹو

پی ٹی آئی جو تبلیغ کرتی ہے اس پر عمل نہیں کرتی، بلاول بھٹو

بلاول بھٹو کی پی ٹی آئی پر کڑی تنقید

یوتھ ویژن : (عمران قذافی سے ) پی پی پی کے رہنما بلاول بھٹو زرداری نے پی ٹی آئی کو فوج سے مذاکرات کرنے پر تنقید کا نشانہ بنایا، یاد کرتے ہوئے کہ پارٹی کے رہنماؤں نے حال ہی میں آئین کو برقرار رکھنے کی اہمیت پر لیکچر دیا تھا اور فوج کو سیاست میں مداخلت سے خبردار کیا تھا۔

پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے اپنے والد کے خطاب پر بحث کے دوران قومی اسمبلی میں خطاب کرتے ہوئے، مسٹر بھٹو زرداری نے کہا، "وہ اپنی سیاست سے جو کہتے ہیں اس کی نفی کرتے ہیں۔”

انہوں نے کہا کہ وہ آئین کی بالادستی، قانون کی حکمرانی اور حقیقی آزادی کی جنگ لڑنے کا دعویٰ کرتے ہیں لیکن وہ ملٹری اسٹیبلشمنٹ سے مذاکرات چاہتے ہیں۔

ایک موقع پر، پی پی پی چیئرمین نے کہا کہ وہ اپوزیشن بنچوں کے احتجاج کو بھڑکاتے ہوئے، اپوزیشن کے "غیر سنجیدہ رویہ” پر اپنی ناراضگی کا اظہار کرنا چاہیں گے۔ انہوں نے کہا کہ اپوزیشن نہ تو جمہوریت پر یقین رکھتی ہے اور نہ ہی اسے آئین کی حکمرانی میں دلچسپی ہے بلکہ وہ اپنے مسائل کا رونا رو رہی ہے۔

آئینی بالادستی پر ‘لیکچر’ کے بعد فوج سے مذاکرات کے لیے چائیڈز پارٹی؛ پی ٹی آئی ارکان کی مزید ‘شرائط’ کی فہرست جاری

انہوں نے کہا کہ وہ اچھی طرح جانتے ہیں کہ انہیں اپنے مفادات کے لیے کس کے پاؤں چھونے پڑتے ہیں۔

انہوں نے یاد دلایا کہ اپوزیشن لیڈر نے کہا کہ اسٹیبلشمنٹ کا سیاست میں کوئی کردار نہیں ہونا چاہیے لیکن ان کے الفاظ کے برعکس وہ انہیں سیاست میں گھسیٹنے کی کوشش کر رہے ہیں۔

انہوں نے پی ٹی آئی کی جانب سے علی امین گنڈا پور جیسے شخص کو وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا منتخب کرنے کے فیصلے پر بھی تنقید کی۔

انہوں نے کہا کہ ماضی میں انہوں نے پنجاب کو عثمان بزدار کا تحفہ دیا تھا۔

انہوں نے کہا کہ اپوزیشن بنچوں کے ارکان اپنے لیڈر کے بارے میں رو رہے ہیں جو خود رو رہے ہیں اور منتیں کر رہے ہیں کہ انہیں جیل سے باہر لایا جائے۔ انہوں نے کہا کہ اپوزیشن آئندہ بجٹ کے لیے ان پٹ فراہم کرے کیونکہ ملک معاشی بحران سے گزر رہا ہے۔

انہوں نے سوال کیا کہ اگر انہیں تنخواہ مل رہی ہے تو کیا وہ اپنے مسائل کا رونا رونے کی بجائے پارلیمنٹ میں مثبت کردار ادا کرکے اس کا جواز پیش کریں گے۔

پی ٹی آئی نے مزید شرائط رکھ دیں۔

مفاہمت اور مذاکرات کے مطالبات ایوان کی کارروائی پر حاوی رہے، پی ٹی آئی نے مذاکرات کے لیے مزید شرائط طے کیں۔

سابق وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کے صاحبزادے پی ٹی آئی رہنما زین قریشی نے اپنی تقریر میں کہا کہ ان کی جماعت مذاکرات کے لیے تیار ہے لیکن اس کے لیے کچھ شرائط ہیں۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان اور ان کے والد سمیت سیاسی بنیادوں پر مقدمات کی بنیاد پر جیل کی سلاخوں کے پیچھے تمام افراد کو رہا کیا جائے۔

انہوں نے فارم 47 میں ہیرا پھیری کے ذریعے پی ٹی آئی کے مینڈیٹ کی چوری کی تحقیقات کے لیے کمیشن بنانے کا بھی مطالبہ کیا۔ انہوں نے 9 مئی کے واقعے کے پس پردہ حقائق کی تحقیقات کے لیے کمیشن کی تشکیل کا بھی مطالبہ کیا۔

انہوں نے کہا کہ ملوث پائے جانے والوں کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے۔ کسی کا نام لیے بغیر، انہوں نے کہا کہ قصوروار پائے جانے والے کو معافی مانگنی چاہیے۔

پی ٹی آئی کے ریاض فتیانہ نے کہا کہ مذاکرات کا واضح ایجنڈا ہونا چاہیے۔

انہوں نے فارم 45 اور 47 میں تضادات کا معاملہ بھی اٹھایا اور کہا کہ ٹربیونلز میں دائر این اے کی 60 نشستوں کے کیسز کا جلد از جلد فیصلہ کیا جائے۔

انہوں نے دعویٰ کیا کہ اگر یہ میرٹ پر کیا جاتا ہے تو اس سے اپوزیشن اور ٹریژری ممبران اپنی سیٹیں بدلیں گے۔

یوتھ ویژن نیوز میں 16 مئی 2024 کو شائع ہوا۔

50% LikesVS
50% Dislikes
WP Twitter Auto Publish Powered By : XYZScripts.com