وہیل چیئر ایشیا کپ: سری لنکن ٹیم کی فتح حکومت کا نیب ترمیمی بل کیس کے فیصلے پر نظرثانی اور اپیل کرنے کا فیصلہ واٹس ایپ کا ایک نیا AI پر مبنی فیچر سامنے آگیا ۔ جناح اسپتال میں 34 سالہ شخص کی پہلی کامیاب روبوٹک سرجری پی ایس او اور پی آئی اے کے درمیان اہم مذاکراتی پیش رفت۔ تحریِک انصاف کی اہم شخصیات سیاست چھوڑ گئ- قومی بچت کا سرٹیفکیٹ CDNS کا ٹاسک مکمل ۔ سپریم کورٹ پریکٹس اینڈ پروسیجر ایکٹ کے خلاف دائر درخواستوں پر آج سماعت ہو گی ۔ نائیجیریا ایک بے قابو خناق کی وبا کا سامنا کر رہا ہے۔ انڈونیشیا میں پہلی ’بلٹ ٹرین‘ نے سروس شروع کر دی ہے۔ وزیر اعظم نے لیفٹیننٹ جنرل منیرافسر کوبطورچیئرمین نادرا تقرر کرنے منظوری دے دی  ترکی کے دارالحکومت انقرہ میں وزارت داخلہ کے قریب خودکش حملہ- سونے کی قیمت میں 36 ہزار روپے تک گر گئی۔ بیرون ملک اسکالر شپز کے نام پر فراڈ کروڑں روپےغائب ہونے کا انکشاف ڈالر پھر سے ہوا بے لگام دام پھر سے بڑھ گئے نامور گلوکارگپی گریوال کے گھر پر حملہ خورشید شاہ کی مسلم لیگ پر کڑی تنقید طویل مدت کے بعد حماس نے 17، اسرائیل نے 39 قیدی رہا کر دیے نیب ٹیم کی اڈیالہ جیل میں عمران خان سے تفتیش ڈائیوو ایکسپریس پاکستان میں 200 الیکٹرک انٹرسٹی بسیں شروع کرنے کے لیے تیار ہے۔ ٹی ٹوئنٹی کپتان بننے کے بعد شاہین آفریدی کا ردعمل اقوامِ متحدہ میں غزہ میں ‘انسانی ہمدردی کی بنیاد پر وقفے’ کی قرارداد منظور شان مسعود پاکستانی ٹیم کے نئے کپتان مقرر

روس کی یوکرین کے خلاف فوجی کاروائی چار سو نوے یوکرینی فوجی ہلاک، روسی وزارت دفاع کا دعوی

یو تھ ویژن نیوز : روس کی وزارت دفاع دعوی کیا ہے کہ روس نے گزشتہ چوبیس گھنٹے کے دوران فوجی کارروائیوں میں یوکرینی فوج کو بھاری جانی نقصان پہنچایا ہے جس کے تازہ ترین اعداد و شمار جاری کیے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: امریکہ کلسٹر بموں کے استعمال کو غیر قانونی سمجھتا ہے لیکن یوکرین کو وہی بم دیتا ہے، ولادیمیر پوتین

روس کی وزارت دفاع اپنے ایک جاری بیان میں کہا ہے کہ گذشتہ چوبیس گھنٹے کے دوران مختلف محاذوں پر روس نے فوجی کارروائیوں میں یوکرین کے چار سو نوے فوجی مارے گئے ہیں۔ روس نے گزشتہ چوبیس گھنٹے کے دوران دونتسک کے جنوبی سیکٹر میں یوکرینی فوج کے روس کے خلاف چھے حملوں اور زاپوریژیا کے علاقے میں ایک حملے کو پسپا کر دیا ہے۔

روس اور یوکرین کی جنگ اپنے تمام تر سیاسی، فوجی، اقتصادی، سماجی حتی ثقافتی اثرات و نتائج کے ساتھ انیسویں مہینے میں داخل ہو چکی ہے اور مغربی ممالک کے ساتھ امریکہ کی جانب سے یوکرین کو بھاری تعداد میں ہتھیاروں کی فراہمی کا سلسلہ بدستور جاری ہے۔

یہ بھی پڑھیں: طوفان نے مشرقی لیبیا میں تباہی مچادی

یورپی اور مغربی ممالک کے ساتھ بلخوص امریکہ روس پر دباؤ ڈال کر اور یوکرین کو مختلف قسم کے ہلکے اور بھاری ہتھار فراہم کر کے جنگ یوکرین کو مزید ہوا دے رہے ہیں۔

روسی حکام اور بعض مغربی ماہرین اور میڈیا کا کہنا ہے کہ جنگ یوکرین مغرب اور روس کے درمیان ایک پراکسی وار ہے

50% LikesVS
50% Dislikes
WP Twitter Auto Publish Powered By : XYZScripts.com