روزنامہ یوتھ ویژن کی جانب سے تمام اہل اسلام کو دل کی اتہا گہرائیوں سے عیدالفطر 2024 مبارک ہو اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور کے زیر اہتمام دسویں بین الاقوامی سیرت النبی ﷺکانفرنس کا انِقعاد وہیل چیئر ایشیا کپ: سری لنکن ٹیم کی فتح حکومت کا نیب ترمیمی بل کیس کے فیصلے پر نظرثانی اور اپیل کرنے کا فیصلہ واٹس ایپ کا ایک نیا AI پر مبنی فیچر سامنے آگیا ۔ جناح اسپتال میں 34 سالہ شخص کی پہلی کامیاب روبوٹک سرجری پی ایس او اور پی آئی اے کے درمیان اہم مذاکراتی پیش رفت۔ تحریِک انصاف کی اہم شخصیات سیاست چھوڑ گئ- قومی بچت کا سرٹیفکیٹ CDNS کا ٹاسک مکمل ۔ سپریم کورٹ پریکٹس اینڈ پروسیجر ایکٹ کے خلاف دائر درخواستوں پر آج سماعت ہو گی ۔ نائیجیریا ایک بے قابو خناق کی وبا کا سامنا کر رہا ہے۔ انڈونیشیا میں پہلی ’بلٹ ٹرین‘ نے سروس شروع کر دی ہے۔ وزیر اعظم نے لیفٹیننٹ جنرل منیرافسر کوبطورچیئرمین نادرا تقرر کرنے منظوری دے دی  ترکی کے دارالحکومت انقرہ میں وزارت داخلہ کے قریب خودکش حملہ- سونے کی قیمت میں 36 ہزار روپے تک گر گئی۔ آئی ایس پی آر نے10 اپریل کوبہاولنگر میں پیش آنے والے واقعے کی انکوائری کا مطالبہ کر دیا وفاقی حکومت نے ترقی کو تیز کرنے کے لیے بینک فنانسنگ کے لیے زراعت، چھوٹے اور درمیانے درجے کے کاروباری اداروں (SMEs) اور انفارمیشن ٹیکنالوجی (IT) جیسے شعبوں کو ترجیح دی ہے2024 ایشیائی ترقیاتی بینک نے رواں مالی سال 2024 کی رپورٹ شائع کردی بھارتی عدالت نے کرپشن کیس میں دہلی کے 55 سالہ وزیراعلیٰ کیجریوال کی گرفتاری کو چیلنج کرنے والی درخواست مسترد کر دی۔ عیدالفطر2024 میں کراچی والوں کو عید کے روز بھی پانی کے بحران سے کوئی چھٹکارا نہ مل سکا سال 2024 میں غیرمتوقع اسٹرابیری کی فصل نے برکینا فاسو کا ‘سرخ سونا’ گھمایا وزیر اعظم شہباز اور ولی عہد سلمان نے پاکستان میں 5 ارب ڈالر کی سعودی سرمایہ کاری کو تیز کرنے پر اتفاق کیا ہے۔ سال 2024 کا وزیراعظم محمد شہباز شریف کا اپنے وفد کے ہمراہ عمرے کی ادائیگی لاہور ہائیکورٹ کے جج سے بدتمیزی پر وکیل کو 6 ماہ قید کے ساتھ 1،00،000جرمانہ ک سزا کا حکم

توشہ خانہ کیس،عدالت نےعمران خان کے گواہان کی فہرست مسترد کردی،فریقین حتمی دلائل کیلئےکل طلب

یوتھ ویژن نیوز :  اسلام آباد کی ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹ میں چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کے خلاف توشہ خانہ فوجداری کیس کی سماعت ۔ عدالت نے چیئرمین پی ٹی آئی کے وکلا کی جانب فراہم کی جانے والی پرائیویٹ گواہان کی لسٹ کو مسترد کر دیا ، فریقین کو حتمی دلائل کے لئے طلب کرلیا ، سماعت کل تک ملتوی۔

یہ بھی پڑھیں: اسلامیہ یونیورسٹی بہاولپورویڈیو سکینڈل،نگران حکومت کا جوڈیشل کمیشن کے قیام کااعلان 

 رپورٹ کے مطابق ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹ می جج ہمایوں دلاور کا کہنا تھا کہ ملزم کے وکلا گواہان کو کیس سے متعلق ثابت کرنے میں ناکام رہےاگر کل فریقین حتمی دلائل نہیں دیتے تو فیصلہ محفوظ کر لیا جائے گا،عدالت نےفریقین کو حتمی دلائل کیلئے کل طلب کر لیا ۔ کیس کی سماعت   کل 11 بجے تک ملتوی کر دی گئی ۔

قبل ازیں دوران سماعت جج ہمایوں دلاور نے ریمارکس دیئے کہ آج گواہان کی لسٹ پیش نہ کی تو آپ کا رائٹ ختم کردیں گے۔

تفصیلات کے مطابق ایڈیشنل سیشن جج ہمایوں دلاور نے پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان کے خلاف توشہ خانہ فوجداری کیس کی سماعت کی۔سماعت شروع ہوئی تو الیکشن کمیشن کے وکیل سعد حسن عدالت میں پیش ہوئے۔چیئرمین پی ٹی آئی کے وکیل خالد یوسف اور مرزا عاصم بیگ بھی عدالت میں آئے۔

وکیل نے عدالت کو بتایا کہ خواجہ حارث سپریم کورٹ میں مصروف ہیں، 12 بجے تک کا وقت دیا جائے۔جس پر وکیل الیکشن کمیشن نے کہا کہ انھوں نے گواہان کی لسٹ عدالت میں پیش کرنی تھی۔۔جج ہمایوں دلاور نے ریمارکس دیے کہ آج گواہان کی لسٹ پیش نہ کی تو آپ کا رائٹ ختم کردیں گے۔بعد ازاں عدالت نے کیس کی سماعت میں 12 بجے تک کا وقفہ کردیا۔

وقفے کے بعد سماعت دوبارہ شروع ہوئی تو چیئرمین پی ٹی آئی کے وکیل بیرسٹر گوہر عدالت کے روبرو پیش ہوگئے۔بیرسٹر گوہر کی جانب سے پرائیویٹ 4 گواہان کی لسٹ عدالت میں جمع کروا دی گئی۔

یہ بھی پڑھیں:سائفرانکوائری کالعدم قررار دینے کی عمران خان کی درخواست پررجسٹرارآفس کےاعتراضات کیخلاف فیصلہ محفوظ

بیرسٹر گوہر  نے کہا کہ ایک گواہ کا تعلق ٹیکس ریٹرنز سےہے،دوسرے گواہ کا تعلق نجی بینک سےہے۔

جج ہمایوں دلاور نے استفسار کیا کہ آج آپ نے گواہان کو پیش کرنا تھا صرف لسٹ کی فراہمی نہیں کرنی تھی۔بیرسٹر گوہر  نے کہا کہ کل تک کا ٹائم دیں ہم پیش کر دیں گے۔جج ہمایوں دلاور نے استفسار کیا کہ صبح سے 2سے 3مرتبہ سماعت میں وقفہ ہو ااور اب بھی آپ ٹائم مانگ رہےہیں۔

بیرسٹر گوہر  نے کہا کہ ہم ایک دن کا وقت مانگ رہےہیں۔جج ہمایوں دلاور نے ریمارکس دیئے کہ اپنے گواہوں کو آج ہی پیش کردیں۔بیرسٹر گوہر نے استدعا کی کہ گواہان کراچی میں ہے ایک دن کاوقت دیدیں۔ 

وکیل الیکشن کمیشن امجد پرویز  نے کہا کہ یہ پرائیویٹ گواہ ہیں،پرائیویٹ گواہوں کو پیش کرناانکی ذمہ داری ہے،الیکشن ایکٹ 2017 کے تحت ٹرائل کررہے ہیں،سوال جھوٹے ڈیکلریشن کا ہے،کوئی بھی دفاع نہیں لیتا کہ یہ فارم میں نے پر نہیں کیا بلکہ کسی دوسرے نے کیا تھا،فارم بی سے متعلق شہادت آنی ہے کہ ڈیکلریشن جھوٹا نہیں تھا،ہارون یوسف پی ٹی آئی کے سینٹرل انفارمیشن سیکرٹری ہیں جنہیں یہ پیش کرنا چاہتے ہیں، ابھی تو انہوں نے زبانی کلامی بتایا ہے کہ گواہ کون ہیں،جس کو گھڑی فروخت کی ہے وہ گواہ ہوتا تو بات سمجھ میں آتی تھی۔

بیرسٹر گوہر  نے کہا کہ یہ غیر ضروری بات کررہے ہیں۔جج ہمایوں دلاور نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ آپ دونوں غیر ضروری بات نہ کریں،آپ کو بار بار وقت دے رہے ہیں،پچھلے 3گھنٹے سے عدالت تحمل کا مظاہرہ کررہی ہے۔بیرسٹر گوہر نے کہا کہ صرف ایک دن کا ٹائم مانگ رہے ہیں یہ ہماراحق ہے۔

بعد ازاں عدالت نے کیس کی سماعت میں 1:30 بجے تک وقفہ کرتے ہوئے عمران خان کی جانب سے فراہم کردہ گواہان کو پیش کرنے کی ہدایت کردی۔ 

یہ بھی پڑھیں؛ کراچی میں پاک بحریہ کے جنگی جہاز پی این ایس طارق کا افتتاح،ترکیہ کےنائب صدراورشہبازشریف بطورمہمان خصوصی شرکت

جج ہمایوں دلاور نے  ریمارکس دیئے کہ 1:30 بجے تک گواہان کو پیش کریں نہیں تو گواہان کی فراہم کردہ لسٹ پر فیصلہ کر دیں گے۔

چیئرمین پی ٹی آئی کیخلاف توشہ خانہ کیس کی سماعت وقفے کے بعد دوبارہ شروع ہوئی تو وکیل الیکشن کمیشن امجد پرویز اور سعد حسن عدالت پیش ہوگئے جبکہ وکیل چیئرمین پی ٹی آئی گوہر علی خان عدالت میں پیش ہوگئے۔

چیئرمین پی ٹی آئی کی آج کی حاضری سے استثنیٰ کی درخواست دائر کردی گئی۔

جج ہمایوں دلاور نے بیرسٹر گوہر سے استفسار کرتے ہوئے کہا کہ گواہان کہاں ہیں؟

بیرسٹر گوہر  نے کہا کہ گواہان سے متعلق تو ہم استدعا کر چکے ہیں کل تک کا ٹائم دیا جائے۔

وکیل الیکشن کمیشن امجد پرویز نے مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ عدالت نے پرائیویٹ گواہان کو پیش کرنے کا آج کہا تھا،ابھی تک کوئی درخواست دائر نہیں کی گئی،کوئی سرکاری گواہ طلب کرنے کیلئے درخواست نہیں دی گئی،بتایا جائے کہ پرائیویٹ گواہ کس طرح سے اس کیس سے متعلقہ ہیں،کیس ملزم کے فائل کردہ اساسوں کا ہے،پہلے تین نام فراہم کردہ لسٹ میں ٹیکس کنسلٹنٹ ہیں،یہ کیس انکم ٹیکس ریٹرن یا ویل سٹیٹمنٹ کا نہیں ہے۔

یہ بھی پڑھیں: روزانہ انجیر کھانے کے 5 بڑے فائدے

وکیل امجد پرویز کی جانب سے چیئرمین پی ٹی آئی کی جانب سے جمع کروائے گئے سوال 30 کا جواب پڑھ کر سنایا گیا۔وکیل امجد پرویز نے کہا کہ ملزم نے اپنے 342 کے بیان میں کہا وہ ٹیکس ریٹرن پر انحصار نہیں کرتے،گواہان کو پیش نہ کرنا کیس کو تاخیر کا شکار کرنے کے مترادف ہے،میں ہمیشہ ڈیفنس سائیڈ کے کیس لڑتا رہا ہوں اور اسطرح کبھی گواہ پیش کرنے کا نہیں کہا۔

چیئرمین پی ٹی آئی کے وکیل گوہر علی خان نے گواہان پیش کرنے کیلئے 2 دن کے وقت کی استدعا کردی۔

جج ہمایوں دلاور نے کھلی عدالت میں فیصلہ لکھواناشروع کر دیا۔

عدالت نے اپنے فیصلے میں کہا کہ بیرسٹر گوہر نے ڈیفنس کے گواہان کی فہرست فراہم کی مگر عدالت میں پیش نہیں کیا،4 گواہان کی فہرست عدالت کو دی گئی،عدالت سے استدعا کی گئی کہ گواہان کے بیانات کیلئے تاریخ دی جائے،الیکشن کمیشن کے وکیل نے گواہان کی فہرست پر اعتراضات اٹھائے۔

عدالت نے اپنے فیصلے میں کہا کہ سرکاری گواہان کی فہرست بھی آج فراہم کی جانی تھی جو نہیں کی گئی،ملزم کی جانب سے پرائیویٹ گواہان کے بیانات ریکارڈ کروائے گئے اور نہ ہی سرکاری گواہان کی فہرست دی گئی،گواہان کی فہرست میں ٹیکس کنسلٹنٹ اور اکاؤنٹنٹ شامل ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: بالوں کو وقت سے پہلے سفید ہونے سے روکنے کیلئے بہترئیں غذائیں کون سی ہیں؟

عدالت نے چیئرمین پی ٹی آئی کے وکلا کی جانب فراہم کی جانے والی لسٹ کو بھی مسترد کر دیا۔

جج ہمایوں دلاور  نے ریمارکس دیئے کہ ملزم کے وکلا گواہان کو کیس سے متعلق ثابت کرنے میں ناکام رہے،عدالت نےفریقین کو حتمی دلائل کیلئے کل طلب کرلیا ہے،اگر کل فریقین حتمی دلائل نہیں دیتے تو فیصلہ محفوظ کر لیا جائے گا۔

بعد ازاں عدالت نے کیس کی سماعت کل 11 بجے تک ملتوی کر دی۔

 واضح رہے کہ گزشتہ روز اسلام آباد کی ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹ میں چیئرمین تحریک انصاف کے خلاف ہونے والی توشہ خانہ فوجداری کیس کی سماعت میں عمران خان نے اپنا 342 کا بیان قلمبند کرایا تھا۔

50% LikesVS
50% Dislikes
WP Twitter Auto Publish Powered By : XYZScripts.com