اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور کے زیر اہتمام دسویں بین الاقوامی سیرت النبی ﷺکانفرنس کا انِقعاد وہیل چیئر ایشیا کپ: سری لنکن ٹیم کی فتح حکومت کا نیب ترمیمی بل کیس کے فیصلے پر نظرثانی اور اپیل کرنے کا فیصلہ واٹس ایپ کا ایک نیا AI پر مبنی فیچر سامنے آگیا ۔ جناح اسپتال میں 34 سالہ شخص کی پہلی کامیاب روبوٹک سرجری پی ایس او اور پی آئی اے کے درمیان اہم مذاکراتی پیش رفت۔ تحریِک انصاف کی اہم شخصیات سیاست چھوڑ گئ- قومی بچت کا سرٹیفکیٹ CDNS کا ٹاسک مکمل ۔ سپریم کورٹ پریکٹس اینڈ پروسیجر ایکٹ کے خلاف دائر درخواستوں پر آج سماعت ہو گی ۔ نائیجیریا ایک بے قابو خناق کی وبا کا سامنا کر رہا ہے۔ انڈونیشیا میں پہلی ’بلٹ ٹرین‘ نے سروس شروع کر دی ہے۔ وزیر اعظم نے لیفٹیننٹ جنرل منیرافسر کوبطورچیئرمین نادرا تقرر کرنے منظوری دے دی  ترکی کے دارالحکومت انقرہ میں وزارت داخلہ کے قریب خودکش حملہ- سونے کی قیمت میں 36 ہزار روپے تک گر گئی۔ دنیا کے لیے بد صورت ترین مگر اپنے وقت کے بہترین کردار ضیاء محی الدین کی پہلی برسی "کپاس کی کاشت میں انقلابی تبدیلی وزیراعظم نے انتخابی نتائج میں تاخیر کے الزامات مسترد کر دیے بلوچستان کے علاقے پشین، قلعہ سیف اللہ میں دو بم دھماکے20 افراد جاں بحق جماعت اسلامی نے انتخابات میں دھاندلی کی صورت میں سخت مزاحمت کا انتباہ دے دیا کیا پی ٹی آئی خیبرپختونخوا کا قلعہ برقرار رکھ سکے گی؟ کراچی میں الیکشن کے انتظامات مکمل پی ٹی آئی کا 5 فروری کو نئے انٹرا پارٹی انتخابات کرانے کا اعلان الیکشن کمیشن نے 8 فروری کو عام تعطیل کا اعلان کر دیا

حکومت نے 415ارب کے مزید ٹیکس لگا دیئے، فنانس ایکٹ 24-2023 لاگو ہوگیا

وفاقی حکومت نے آئی ایم ایف کی شرائط کے مطابق415ارب کے مزید ٹیکس کی وصولی کیلئے حکومت نے فنانس ایکٹ 24-2023 لاگو کردیا گیا

تفصیلات کے مطابق فنانس ایکٹ 2023کے ذریعےبجٹ میں عائد کردہ  مجموعی طور پر 415 ارب روپے کے مزید ٹیکس لاگو کردیے ہیں جس کے تحت بچوں کے پانچ سو روپے مالیت تک کے 200 گرام کے دودھ کے ڈبے پر سیلز ٹیکس پانچ فیصد سے بڑھا کر چھ فیصد کردیا ہے۔

قابل ٹیکس اشیا کی غیر رجسٹرڈ لوگوں کو سپلائی پر سیلز ٹیکس کی شرح 3  فیصد سے بڑھا کر 4 فیصد کردی ہے، کھاد پر پانچ فیصد فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی عائد، ماہانہ دو لاکھ روپے سے زائد کی تنخواہ پر انکم ٹیکس کی شرح میں اڑھائی فیصد اضافہ کردی گئی ہے جبکہ نان فائلرز کیلئے پچاس ہزار روپے سے زائد کی بینکنگ ٹرانزیکشن پر 0.6 فیصد ٹیکس لاگو کیا گیا ہے۔

  فنانس ایکٹ2023کے نافذ ہوتے ہی پٹرولیم لیوی 50 سے بڑھا کر 55 روپے کرنے کے بعد آمدنی پراضافی سپرٹیکس بھی نافذ کردیا ہےسپرٹیکس کیلئےانکم سلیب30 کروڑسےبڑھا کر50 کروڑکردی گئی ہےاب سالانہ 50 کروڑ روپےسے زائد آمدن پر10 فیصد سپرٹیکس لگےگا۔

فنانس ایکٹ کے تحت بینکنگ کمپنیوں کی30 کروڑسےزائدآمدن پربھی10فیصد سپرٹیکس عائدکیا گیا ہے بڑے شعبوں میں 30 کروڑسے زیادہ کمانے پربھی10 فیصد ٹیکس دینا ہوگا فیڈرل بورڈ آف ریونیو نے فنانس ایکٹ 2023-24 ویب سائٹ پر بھی آپ لوڈ کردیا ہے۔

جس کے تحت بڑےشعبوں میں پیٹرولیم، گیس، ادویہ سازی، شوگر، ٹیکسٹائل پربھی، فرٹیلائزر، لوہا،اسٹیل،ایل این جی ٹرمینل،آئل مارکیٹنگ،آئل ریفائنر، ایئرلائنز، آٹوموبائلز، بیوریجز،سیمنٹ، کیمیکلز، سگریٹ، تمباکوسیکٹر بھی شامل ہیں۔ان کو بھی10 فیصدسپر ٹیکس ادا کرنا ہوگاسالانہ40 کروڑ سے50 کروڑ کمانےوالی کمپنیوں سے8 فیصد سپر ٹیکس لیا جائیگا،35 کروڑ سے 40 کروڑ آمدن پر سپرٹیکس کی شرح 4 سے بڑھ کر6 فیصد ہوگئی ہےسالانہ 30 کروڑ سے 35 کروڑ روپے آمدن پر 4 فیصد، 25 کروڑ سے 30 کروڑ آمدن پر 3 فیصد ،20 کروڑ سے 25 کروڑ روپے آمدن پر 2 فیصد،15 کروڑ سے 20 کروڑ روپے آمدن پر 1 فیصداورسالانہ 15 کروڑ روپے تک آمدن پر سپر ٹیکس کی شرح صفر سطح پر برقراررکھی گئی ہے۔

50% LikesVS
50% Dislikes
WP Twitter Auto Publish Powered By : XYZScripts.com