اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور کے زیر اہتمام دسویں بین الاقوامی سیرت النبی ﷺکانفرنس کا انِقعاد وہیل چیئر ایشیا کپ: سری لنکن ٹیم کی فتح حکومت کا نیب ترمیمی بل کیس کے فیصلے پر نظرثانی اور اپیل کرنے کا فیصلہ واٹس ایپ کا ایک نیا AI پر مبنی فیچر سامنے آگیا ۔ جناح اسپتال میں 34 سالہ شخص کی پہلی کامیاب روبوٹک سرجری پی ایس او اور پی آئی اے کے درمیان اہم مذاکراتی پیش رفت۔ تحریِک انصاف کی اہم شخصیات سیاست چھوڑ گئ- قومی بچت کا سرٹیفکیٹ CDNS کا ٹاسک مکمل ۔ سپریم کورٹ پریکٹس اینڈ پروسیجر ایکٹ کے خلاف دائر درخواستوں پر آج سماعت ہو گی ۔ نائیجیریا ایک بے قابو خناق کی وبا کا سامنا کر رہا ہے۔ انڈونیشیا میں پہلی ’بلٹ ٹرین‘ نے سروس شروع کر دی ہے۔ وزیر اعظم نے لیفٹیننٹ جنرل منیرافسر کوبطورچیئرمین نادرا تقرر کرنے منظوری دے دی  ترکی کے دارالحکومت انقرہ میں وزارت داخلہ کے قریب خودکش حملہ- سونے کی قیمت میں 36 ہزار روپے تک گر گئی۔ دنیا کے لیے بد صورت ترین مگر اپنے وقت کے بہترین کردار ضیاء محی الدین کی پہلی برسی "کپاس کی کاشت میں انقلابی تبدیلی وزیراعظم نے انتخابی نتائج میں تاخیر کے الزامات مسترد کر دیے بلوچستان کے علاقے پشین، قلعہ سیف اللہ میں دو بم دھماکے20 افراد جاں بحق جماعت اسلامی نے انتخابات میں دھاندلی کی صورت میں سخت مزاحمت کا انتباہ دے دیا کیا پی ٹی آئی خیبرپختونخوا کا قلعہ برقرار رکھ سکے گی؟ کراچی میں الیکشن کے انتظامات مکمل پی ٹی آئی کا 5 فروری کو نئے انٹرا پارٹی انتخابات کرانے کا اعلان الیکشن کمیشن نے 8 فروری کو عام تعطیل کا اعلان کر دیا

پاکستانی معیشت تنزلی کا شکار،24سے47ویں نمبر پرپہنچ گئی،اسحاق ڈار

یوتھ ویژن نیوز : وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار کاکہنا ہے کہ  گزشتہ حکومت کی ناقص پالیسیوں سے ملکی معیشت 24 ویں نمبر سے 47 ویں نمبر پر پہنچ گئی ۔ پاکستان کو واپس ترقی کےراستے پر لائیں گے۔

وزیرخزانہ  اسحاق ڈار کا قومی اقتصادی سروے پیش کرتے ہوئے کہنا تھاکہ 2013میں جب حکومت سنبھالی توبرے معاشی حالات تھے۔ن لیگ کی حکومت نے تھری ایزپرکام شروع کیا۔2023 کو فائیو ایز کا نام دیا جاسکتا ہے۔یہ ملکی معاشی اور مجموعی صورتحال کے حوالے سے انتہائی مشکل سال تھا۔مائیکرو اکنامک استحکام کی بحالی کے انڈیکیٹرز بتائے گئے ہیں۔اگلے سال کیلئے5اہداف مقررکیے ہیں۔ہم نے ملکی معیشت کوترقی کی جانب لے کرجاناہے۔پچھلی حکومت نے ملکی ترقی کا راستہ روکا۔2017میں پاکستان جس پوزیشن پرتھااسے وہاں لے کرجاناہے۔ہم ویژن مائیکرواکنامکس  پرعمل پیرا ہیں۔

اسحاق ڈار کاکہنا تھا کہ کچھ اس طرح کی افسوسناک خبریں آتی ہیں کہ بیرون ملک بیٹھ کر لوگ اس پر بحث کرتے ہیں کہ پاکستان اب تک سری لنکا کیوں نہیں بنا۔میاں شہباز شریف کی حکومت کو دنیا یاد رکھے گی۔ہم نے سیاست کی بجائے ریاست کو بچایا۔

وزیرخزانہ کاکہنا تھاکہ  وزیر خزانہ نے کہا کہ اقتصادی سروے کا موضوع برآمدات، ایکویٹی، ایمپاورمنٹ، ماحولیات اور توانائی ہے۔ اقتصادی سروے 17 ابواب پر مشتمل ہے، جس کا مقصد گزشتہ چند برسوں میں پاکستان کی معیشت کی زبوں حالی کو واپس ترقی کی جانب لے جانا ہے۔ پاکستان نے ختم مالی سال کے لیے مجموعی ملکی پیداوار (جی ڈی پی) کی شرح نمو 0.29 فیصد حاصل کی، جس سے 5 فیصد کا ہدف بڑے مارجن سے حاصل نہیں ہوا۔یہ معمولی نمو زراعت، صنعت اور خدمات کے شعبوں میں بالترتیب 1.55 فیصد، -2.94 فیصد، اور 0.86 فیصد رہی۔

وزیر خزانہ کاکہنا تھا کہ اگر یہ حکومت ذمہ داری نہ سنبھالتی تو نہ جانے ملک کہاں کھڑا ہوا تھا کیوں کہ ہماری حکومت آنے سے قبل آخری تیسری سہ ماہی میں غیر ملکی زرِ مبادلہ میں 6 ہزار 400 ارب ڈالر کی کمی ہوئی تھی۔

اسحاق ڈار کامزید کہنا تھا کہ اس وقت ڈالی کی قیمت میں 40 سے 45 روپے کا آرٹیفیشل گیپ ہے۔ہماری کرنسی آرٹیفیشل وجوہات کے باعث انڈر ویلیو ہے۔پاکستانی کی معیشت21 فیصد اسلامی اصولوں کے مطابق ہو چکی ہے۔بارٹر ٹریڈ سے پاکستان کو بہت فائدہ حاصل ہو گا۔رواں مالی سال جولائی سے مئی تک مہنگائی کی شرح 29.2 فیصد ہے۔رواں مالی سال ایف بی آر کی ٹیکس کلیکشن میں16.1 فیصد اضافہ ہوا۔ایف بی آر نے اب تک 6 ہزار 210 ارب ٹیکس اکھٹا کیا۔ 7 لاکھ نئے ٹیکس دہندگان کو رجسٹرڈ کرنا تھا۔گزشتہ سال کرنٹ اکاونٹ خسارہ 13 فیصد تھا جو اب 3.2 فیصد ہے۔گیارہ ماہ میں امپورٹ میں 29.2 اور ایکسپورٹس میں 12.2 فیصد کی کمی آئی ہے۔رواں مالی سال ترسیلات زر میں 13 فیصد کمی آئی ہے۔

50% LikesVS
50% Dislikes
WP Twitter Auto Publish Powered By : XYZScripts.com