اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور کے زیر اہتمام دسویں بین الاقوامی سیرت النبی ﷺکانفرنس کا انِقعاد وہیل چیئر ایشیا کپ: سری لنکن ٹیم کی فتح حکومت کا نیب ترمیمی بل کیس کے فیصلے پر نظرثانی اور اپیل کرنے کا فیصلہ واٹس ایپ کا ایک نیا AI پر مبنی فیچر سامنے آگیا ۔ جناح اسپتال میں 34 سالہ شخص کی پہلی کامیاب روبوٹک سرجری پی ایس او اور پی آئی اے کے درمیان اہم مذاکراتی پیش رفت۔ تحریِک انصاف کی اہم شخصیات سیاست چھوڑ گئ- قومی بچت کا سرٹیفکیٹ CDNS کا ٹاسک مکمل ۔ سپریم کورٹ پریکٹس اینڈ پروسیجر ایکٹ کے خلاف دائر درخواستوں پر آج سماعت ہو گی ۔ نائیجیریا ایک بے قابو خناق کی وبا کا سامنا کر رہا ہے۔ انڈونیشیا میں پہلی ’بلٹ ٹرین‘ نے سروس شروع کر دی ہے۔ وزیر اعظم نے لیفٹیننٹ جنرل منیرافسر کوبطورچیئرمین نادرا تقرر کرنے منظوری دے دی  ترکی کے دارالحکومت انقرہ میں وزارت داخلہ کے قریب خودکش حملہ- سونے کی قیمت میں 36 ہزار روپے تک گر گئی۔ دنیا کے لیے بد صورت ترین مگر اپنے وقت کے بہترین کردار ضیاء محی الدین کی پہلی برسی "کپاس کی کاشت میں انقلابی تبدیلی وزیراعظم نے انتخابی نتائج میں تاخیر کے الزامات مسترد کر دیے بلوچستان کے علاقے پشین، قلعہ سیف اللہ میں دو بم دھماکے20 افراد جاں بحق جماعت اسلامی نے انتخابات میں دھاندلی کی صورت میں سخت مزاحمت کا انتباہ دے دیا کیا پی ٹی آئی خیبرپختونخوا کا قلعہ برقرار رکھ سکے گی؟ کراچی میں الیکشن کے انتظامات مکمل پی ٹی آئی کا 5 فروری کو نئے انٹرا پارٹی انتخابات کرانے کا اعلان الیکشن کمیشن نے 8 فروری کو عام تعطیل کا اعلان کر دیا

اردو کی چاشنی

تحریر : عروبہ عدنان

اللہ نے انسان کو اشرف المخلوق کہا ہے اور اس کی وجہ اسکا باشعور ہونا اور اپنے خیالات اور احساسات کا اظہار زبان کے ذریعے کرنا ہے ۔ زبان سماجی و ثقافتی روایات واقدار کا خزانہ ہوتی ہے ۔ یہ ماحول و وجدان کے ملاپ سے وجود میں آئ ۔ کسی بھی قوم کی پہچان ،اسکا تشخص اسکی زبان ہوتی ہے ۔ دنیا میں بہت سی زبانیں بولی جاتی مگر کچھ زبانیں ایسی ہیں جو آسان ،عام فہم ہونے کے باعث کسی خاص علاقے یا ملک تک محدود نہیں رہتیں، بلکہ مقبولِ عام ہو کر بین الاقوامی زبان کہلائ جانے لگتی ہیں یعنی وہ زبانیں جو مختلف ملکوں میں بولی اور سمجھی جاتی ہیں عالمگیر زبانیں کہلاتی ہیں مثلاً انگلش ،عربی ،جرمن،چینی اور اردو ۔ یہ ایسی زبانیں ہیں جو تقریباً دنیا بھر میں بولی اور سمجھی جاتیں ہیں اور رابطے کی زبان کہلائ جاتی ہیں ۔ اردو زبان اپنے اندر بہت وسعت لئے ہوئے ہے ۔ یہ مختلف زبانوں کا حسین امتزاج ہے ،اس کا مطلب یہ ہوا کہ پاک و ہند میں اردو کا وجود بہت سی زبانوں کے ملاپ سے وقوع پزیر ہوا ۔ اسی لیے اردو کو لشکری زبان بھی کہا جاتا ہے ۔ اردو زبان میں تہذیب و محبت کی ایسی مٹھاس و چاشنی بھری ہے کہ سننے والا اس سے متاثر ہوئے بنا نہیں رہتا اور اس کی وجہ یہ ہے کہ اس میں بہت ساری زبانوں کا حسین سنگم موجود ہے اسی لیے سننے والے کو اردو زبان نامانوس معلوم نہیں ہوتی یہی وجہ ہے کہ فارسی ,،ترکی ،عربی اور ہندی بولنے والے جلد اسے سمجھنے اور بولنے لگتے ہیں اور یہی نہیں بلکہ اب تو ہندی سرے سے بولی ہی نہیں جاتی ۔ ہند میں فقط اردو ہی ہے جو بولی اور سمجھی جاتی ہے ۔ بس دو چار الفاظ کی آمیزش کر کے ہندوستان میں دعوی کیا جاتا ہے کہ ان کی بولی” ہندی” ہے ۔ ہندی تو دراصل سنسکرت زبان ہے جس کا وجود اب انڈیا کی پرانی کتابوں کے علاوہ کہیں نہیں ملے گا ۔ ۔۔۔ یہی وجوہات ہیں جن کی وجہ سے اردو ہر دلعزیز و مقبول زبان بن گئ ہے اور یہ زبان بڑی تیزی سے ترقی کے مراحل طے کرتے ہوئے آج اس مقام تک پہنچی گئ ہے کہ اس کو جاننے ،بولنے اور سمجھنے والے دنیا بھر میں موجود ہے ۔اردو نے ایک طویل سفر طے کیا ہے اپنے اس وجود تک آنے کے لیے ۔۔۔ فہم و ادراک کے نئے و پرانے خزانے دریافت ہوئے اور انسانی خیالات و احساسات کی جیتی جاگتی آواز اردو زبان برصغیر میں معرضِ وجود میں آئ ۔۔۔۔۔
اردو جسے کہتے ہیں تہذیب کاچشمہ ہے
وہ شخص مہذب ہے جس کو یہ زباںآئی
روش صدیقی

50% LikesVS
50% Dislikes
WP Twitter Auto Publish Powered By : XYZScripts.com