عمران خان کی عاصم منیر سے دوریوں کی وجہ سامنے آگئی،تہلکہ خیزانکشاف

پاک فوج کے نئے سربراہ جنرل عاصم منیر کے متعلق دعویٰ کیا جارہا ہے کہ کسی وقت میں وہ عمران خان کی پسندیدہ ترین شخصیت تھے۔

تفصیلات کے مطابق سینئرصحافتی حلقوں کی جانب سے انکشاف کیا گیا ہے کہ یہ پسندیدگی کیوں ختم ہوئی اس راز سے پردہ اٹھا دیا گیا ہے۔ سینئر صحافی شاہزیب خانزادہ نے دعویٰ کیا ہے کہ اسی پسندیدگی کی وجہ سے جنرل عاصم منیر کو ڈی جی آئی ایس آئی لگایا گیا اور وہ اس عہدے پر 6 ماہ تک فائز رہے۔ جس کے بعد انہیں عہدے سے ہٹا دیا گیا۔

شاہزیب خانزادہ نے دعویٰ کیا کہ عمران خان نہیں چاہتے تھے کہ عاصم منیر آرمی چیف بنیں، بلکہ تحریک انصاف کی وجہ سے سارا معاملے کو متنازع بھی عاصم منیر کی وجہ سے بنایا گیا۔ ذرائع کے مطابق عمران خان نے کہا تھا کہ آرمی چیف کون بنے یہ مسئلہ نہیں بلکہ مسئلہ یہ ہے کہ عاصم منیر نہ آرمی چیف بن جائیں۔ 

شاہزیب خانزادہ نے تہلکہ خیز انکشاف کرتے ہوئے کہا ہے کہ بطور ڈی جی آئی ایس آئی عاصم منیر نے عمران خان کے سامنے بنی گالہ اور ان کے اہلخانہ سے متعلق کرپشن کے ثبوت رکھے۔ عاصم منیر عمران خان سے ایکشن لینے کی توقع کررہے تھے لیکن عمران خان نے انہیں ہی عہدے سے ہٹا دیا۔ 

سینئر صحافی کا کہنا ہے کہ اس معاملے میں اصول نہیں ذات شامل تھی جو عمران خان کو عاصم منیر کو آرمی چیف بننے سے روکنے کی کوشش کررہی تھی۔ کیونکہ انہیں اس وقت کے ڈی جی آئی ایس آئی کی جانب سے دیے گئے ثبوت اچھے نہیں لگے تھے۔ 

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں

WP Twitter Auto Publish Powered By : XYZScripts.com