ایک روٹی چاروں بھائیوں کومل کرکھانا ہوگی،وزیراعظم شہباز شریف

گوادر (ثاقب غوری سے ) وزیرا عظم شہباز شریف کا کہناہے کہ ایک روٹی چاروں بھائیوں کو مل کر کھانا ہوگی،جب چارروٹیاں ہوں گی تو چاروں بھائی بچوں میں تقسیم کریں گے۔ان خیالات کا اظہارانہوں نے گوادر میں منعقدہ تقریب کے دوران کئے۔میڈیا رپورٹس کےمطابق وزیراعظم کاکہناتھاکہ یقین دلاتا ہوں کہ گوادر کے مسائل حل کریں گے اورمسائل حل کیے بغیر ترقی بے معنیٰ ہے،گوادر کا ایک ماہ میں یہ میرا دوسرا دورہ ہے اور ہمارا فرض ہے کہ ہم حکومتی وعدوں کو پورا کریں گے،وفاقی حکومت بلوچستان کے مسائل حل کرنے کی خواہاں ہے،خواہش ہے کہ گوادر اور بلوچستان کے عوام کو منصوبوں سے فائدہ ہو اور مقامی افراد کے مسائل حل کریں گے،وزیراعظم نےکہا کہ گوادر کی ترقی ہی بلوچستان کی ترقی ہے، حکمرانوں کا فرض ہے کہ بلوچستان کے عوام کے مسائل اور تکلیف کم کریں۔

انہوں نے کہا کہ گوادر کے ماہی گیروں کو کشتیوں کے لیے انجن دیں گے اور انجن کی تقسیم کے بعد مینٹیننس کی ذمہ داری بھی کمپنی کی ہو گی۔ 2 ہزار کشتیوں کے انجن کی تقسیم میرٹ کی بنیاد پر ہو گی، انکا کہناتھا کہ گوادر کے عوام بجلی کو ترس رہے ہیں لیکن ہم نے سالوں کی تاخیرکردی۔اس سے قبل وزیراعظم شہبازشریف نے غربت کم کرنے کیلئے بڑی صنتوں پر دس فیصد سپر ٹیکس لگانے کااعلان کیا ۔
وزیراعظم نے کہا کہ سیمنٹ ،شوگر،اسٹیل،آئل اینڈ گیس سیکٹر، ٹیکسٹائل ،بیکنگ ،فرٹیلائر،آٹوموبائل اور بیور یجزانڈسٹری پر دس فیصد ٹیکس لگے گا۔ وزیراعظم شہباز شریف نے معاشی ٹیم کے اجلاس کے بعد گفتگومیں کہا کہ کوشش ہے عوام کو زیادہ سے زیادہ ریلیف فراہم کریں، آئی ایم ایف سے مزید شرائط نہ آئیں تو امیدہے معاہدہ ہوجائے گا، بجٹ میں کیے گئے اعلانات کے مطابق آئی ایم ایف شرائط منظور ہوچکیں، موجودہ حکومت نے جرات مندانہ فیصلے کئے ہیں ،پاکستان ان فصیلوں سے مشکلات سے نکلے گا. واضح رہے کہ بعض حلقوں نے وزیراعظم کی ایک روٹی کو چار ٹکڑوں میں تقسیم کرنے اور ہر صوبے کو ایک چوتھائی حصہ دینے کی بات پر مزاحیہ تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ بھیک میں جو چار روٹیاں ملینگی تین روٹیاں وفاقی حکومت ھڑپ لیگی اور باقی ایک کو چاروں صوبوں پہ تقسیم کریگی۔ دوسری طرف خبریں موصول ہو رہی ہے کہ خیبر پختونخوا حکومت اور وفاق کے درمیان چپقلش نے شدت اختیار کی ہے اور صوبائی حکومت کے ساتھ وفاق کی جانب سے ناروا سلوک اور تعاون نہ کرنے کی وجہ سے خیبر پختونخوا حکومت کو سخت مالی بحران کا سامنا ہے اور اعلان کیا ہے کہ حتی ملازمین اور پنشنیئرز کو تنخواہیں ادا کرنے کے لئے بھی پیسے نہیں ہیں۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں

WP Twitter Auto Publish Powered By : XYZScripts.com